آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
جمعہ 15؍ ذیقعد 1440ھ19؍جولائی 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

ماہ رمضان کے مقدس مہینے میں روزے داروں کو متوازن غذا کھانے کی ضرورت ہوتی ہے۔ اس کے لیے ایک ایسا ڈائٹ پلان ترتیب دیا جاتا ہے، جو روزے کی حالت میں ان کی توانائی (انرجی لیول) کم نہ ہونے دے۔ اسی لیے سحری خاص اہمیت کی حامل ہوتی ہے اور اسلام میں بھی سحری کرنے کی تاکید کی گئی ہے۔ سحری کے وقت لی گئی غذاؤں کی بدولت انسان کا جسم پورا دن متحرک رہتا ہے۔ لہٰذا ضروری ہے کہ آپ سحری میں ایسی غذائیں کھائیں، جن سے آپ کا جسم ڈی ہائیڈریشن کا شکار نہ ہونے پائے۔ دماغ اور جسم کے لیے ایسی متوازن غذاؤں اور مشروبات کا استعمال کریں، جو آپ کو پورا دن صحت مند اور چاق و چوبند رکھ سکیں۔ ایسی ہی کچھ غذاؤں کا ذکر ذیل میں کیا جارہا ہے۔

انڈہ پراٹھا

سبزی یا آلو کے پراٹھے تو دنیا بھر میں بھی کھائے جاتے ہیں، تاہم ہمارے یہاں ان پراٹھوں کے ساتھ ساتھ منفرد اور غذائیت سے بھرپور ’’انڈہ پراٹھا‘‘ بھی بڑے شوق سے کھایا جاتا ہے۔ طبی ماہرین سحری میں پروٹین سے بھرپور غذاؤں کو شامل کرنے کا مشورہ دیتے ہیں کیونکہ پروٹین روزے داروں کو نہ صرف دن بھر متحرک رکھتا ہے بلکہ جسمانی توانائی بڑھانے کا بھی باعث بنتا ہے۔ اگر آپ اُبلے ہوئے انڈے نہیں کھا پارہے تو انڈہ پراٹھا ایک بہترین متبادل ثابت ہوسکتا ہے۔ ایک انڈے میں 8سے12گرام پروٹین کی مقدار پائی جاتی ہے، جو دن بھر کے لیے جسم میں حرارت اور طاقت پیدا کرتی ہے۔

فروٹ سلاد

سحری میں کھائی جانے والی غذا میں فروٹ سلاد کامتوازن استعمال بھی لازمی ہونا چاہیے۔ اگر دوران رمضان آپ وٹامن سے بھرپور غذاؤں کا استعمال نہ کرپائے تو وٹامن کی کمی آپ کی صحت کے لیے خطرہ ثابت ہوسکتی ہے۔ لہٰذا دوران رمضان اس بات کا خیال رکھیں کہ آپ کی سحری میں ضروری غذائیت پر مشتمل تمام غذائیں موجود ہوں، جن میں ایک چھوٹا باؤل فروٹ سلاد کا بھی ہونا چاہیے۔ فروٹ سلاد میں فائبر سے بھرپور پھل مثلاً کیلے، سیب، آڑو اور ناشپاتی وغیرہ کا استعمال کریں، ان پھلوں کے استعمال سے آپ کا پیٹ زیادہ دیر بھرا رہتا ہے اور قبض بھی نہیں ہوپاتا۔

اسموتھی

اگر آپ سحری کے لیے فوری توانائی بھر ی اسموتھی تیار کرنا چاہتے ہیں تو کیلے، جَو (اوٹ میل) اور کینو کے جوس سے بنائی گئی اسموتھی بہترین ثابت ہوتی ہے۔ ا ن تمام اجزا کو بلینڈر میں اچھی طرح مکس کریں گی تو توانائی سے بھرپور اسموتھی تیار ہوجائے گی، جو دن بھر آپ کو سیر اور تروتازہ رکھنے میں بہترین ثابت ہوسکتی ہے۔ ماہرین کے مطابق کیلے میں 80فیصد غذائی اجزا پائے جاتے ہیں، جو آپ کو کیلشیم، فاسفورس، میگنیشیم اور آئرن فراہم کرتے ہیں جبکہ کینو کا جوس جسم میں وٹامن سی کی کمی پورا کرتا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ اس اسموتھی کا استعمال سحری میں آپ کے لیے بہترین رہے گا ۔

کھجلہ پھینی

کھجلہ پھینی کو رمضان کی خاص سوغات مانا جاتا ہے، جس کے بغیر سحری ادھوری سمجھی جاتی ہے۔ میدے سے بنے کھجلہ اور پھینی کو دودھ میں ڈال کر کھانے سے روزے دار کو دن بھر توانائی ملتی ہے۔ کھجلہ اور پھینی کا شمار دیر سے ہضم ہونے والی غذاؤں میں ہوتا ہے، اسی وجہ سے اس کو کھانے کے بعد روزےدار کو بھوک بھی کم لگتی ہے اوروہ پورا دن تندرست وتوانا رہتا ہے۔

گری دار میوے

گری دار میوے سحری کی صحت بخش غذاؤں میں سے ایک ہیں۔ گری دار میووں میں ہیلتھی فیٹ، پروٹین اور فائبر کی کثیر مقدار پائی جاتی ہے جو کہ دن بھر انسان کو چاق وچوبند اور توانا رکھنے میں مفید ثابت ہوتے ہیں۔اس کے ساتھ یہ غذا کاربوہائیڈریٹس کی وافر مقدار فراہم کرتی ہے، جو توانائی کی سطح (انرجی لیول) کو بڑھانے میں مددگار ثابت ہوتے ہیں۔

دال

دالوں کو ڈائٹری فائبر اور پروٹین فراہم کرنے والی غذاؤں میں خاص اہمیت حاصل ہے۔ یہی نہیں، دالوں میں آئرن کی کثیر مقدار بھی پائی جاتی ہے۔ یہ مقدار جسم میں توانائی کی سطح بڑھانے کے لیے بے حد ضروری سمجھی جاتی ہے، لہٰذا اگر آپ سحری میں دالوں کا استعمال کررہے ہیں تو سمجھ لیں کہ آپ صحت بخش غذاؤں کی وافر مقدار لے رہے ہیں۔ 

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں