آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
بدھ 15؍ شوال المکرم 1440ھ 19؍جون 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

ٹوری کی کفایت شعاری پالیسی لوگوں کے مصائب اور دکھوں میں اضافے کا سبب بن گئی

لندن (نیوز ڈیسک) اقوام متحدہ کے زیر اہتمام تیار کی گئی ایک رپورٹ میں ٹوری پارٹی کی شروع کردہ نظریاتی کفایت شعاری مہم کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا گیا ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ٹوری کی کفایت شعاری پالیسی لوگوں کے مصائب اور دکھوں میں اضافے کا سبب بن گئی ہے اور اس کی وجہ سے پورے برطانیہ میں عدم مساوات اور غربت میں بے پناہ اضافہ ہوا ہے۔ رپورٹ میں کفایت شعاری مہم کو برطانیہ کی فلاحی ریاست پر ایک سیاہ دھبہ قرار دیا گیا ہے۔ انڈیپنڈنٹ میں شائع ہونے والی خبر کے مطابق شدید غربت کے حوالے سے اقوام متحدہ کے نمائندے کی تیار کردہ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ 2010میں قائم ہونے والی مخلوط حکومت کے بعد سے سماجی اعتبار سے المناک نتائج برآمد ہونے کے باوجود، جن میں بھوک اور بے گھری میں اضافہ شامل ہے، اس پر بے محابہ عملدرآمد جاری ہے۔ فلپ السٹن کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ اگرچہ برطانیہ دنیا کی پانچویں بڑی معیشت ہے، اس ملک کی 20 فیصد آبادی یعنی کم وبیش 14 ملین افراد غربت کی زندگی گزار رہے ہیں اور ان میں سے 1.5ملین افراد کو 2017 میں مفلسی کا سامنا کرنا پڑا جبکہ یہ پیشگوئی کی گئی ہے کہ 2021 تک کم وبیش40فیصد بچوں کو غربت اور فاقہ کشی کی زندگی گزاانے پر مجبور ہونا پڑے گا۔ فوڈ بینکس کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے، بے گھری اور کھلے آسمان تلے سونے

والوں کی تعداد میں بے پناہ اضافہ ہوا ہے۔ ہزاروں غریب خاندانوں کو اپنے بچوں کے سکولوں، اپنی ملازمتوں کے مقامات اور کمیونٹی نیٹ ورکس سے بہت فاصلے پر رہنے پر مجبور ہونا پڑ رہا ہے۔ مختلف گروپوں میں اوسط مدت حیات کم ہو رہی ہے اور قانونی امداد کا نظام انتہائی کمزور پڑ چکا ہے۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں