آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
جمعرات23؍ ربیع الاوّل 1441ھ 21؍نومبر 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
تازہ ترین
آج کا اخبار
کالمز

زندگی میں کامیابی کے لیے کتابیں پڑھنا بہت ضروری ہے۔ آپ دنیا کے جس کسی بھی کامیاب شخص کی زندگی پر نظر ڈالیں گے، آپ کو کتب بینی اس کی زندگی میں شامل ملے گی۔ اگر آپ بھی زندگی میں کامیاب کاروباری شخص بننا چاہتے ہیں تو آپ کی رہنمائی کے لیے گزشتہ ایک سال کے دوران شائع ہونے والی چند بہترین کاروباری کتابوں کا جائزہ پیش کیا جارہا ہے۔


Principles for Navigating Big Debt Crises

اس کتاب کے مصنف رے ڈیلیو (Ray Dalio)دنیا کے سب سے بڑے ہیج فنڈ ’بِرج واٹر ایسوسی ایٹس‘ کے بانی اور ساتھی چیف انویسٹ منٹ آفیسر (Co-CIO)ہیں۔ اس سے پہلے انھوں نے Principles: Life and Work کے نام سے کتاب تحریر کی تھی، جس میں انھوں نے اپنی فرم کے انتہائی غیرمعمولی کلچر پر روشنی ڈالتے ہوئے اسے اپنی ذاتی فلاسفی کی توسیع قرار دیا تھا۔ نئی کتاب انھوں2008ء کے عالمی مالیاتی بحران کے10سال مکمل ہونے پر لکھی ہے اور بتایا ہے کہ انھوں نے اور ان کی ٹیم نے اس بحران سے کیا سیکھا اور اس سے کس طرح نکلنے میں کامیاب ہوئے۔

یہ ایک ضخیم کتاب ہے، تاہم رے ڈیلیو نے اپنی تحریر کو سادہ سے سادہ رکھنے کی کوشش کی ہے۔ اگر آپ سمجھنا چاہتے ہیں کہ گزشتہ عالمی مالیاتی بحران میں کیا ہوا اور ایک نیا بحران کیوں ناگزیر ہے تو پھر آپ کو یہ کتاب ضرور پڑھنی چاہیے۔


Imagine It Forward

’اِمیجن اِٹ فارورڈ‘، جنرل الیکٹرک اور این بی سی میں 30سال تک ایگزیکٹو عہدوں پر رہنے والی بتیھ کامسٹاک (Beth Comstock)کی یادداشتوں پرمبنی کتاب ہے۔ کتاب میں کئی دلچسپ واقعات کا ذکر شامل ہے، جیسےانھوں نے اسٹیو جابز کے ساتھ نوکری کے لیے اپنے انٹرویو کا ذکر کیا ہے، جو کتاب پڑھنے والوں کے لیے کافی مفید ثابت ہوگا۔ کتاب میں پروفیشنلز کے لیے کئی مؤثر عملی مشورے بھی موجود ہیں، جیسے انھوں نے کیریئر میں ترقی پانے یا نہ پانے کا ایک عالمی اصول بتایا ہے: کیریئر میں ترقی (پروموشن) خود بخود آپ کی گود میں آکر نہیں گِرے گی، جب تک کہ آپ اس کا اظہار نہ کریں۔


Mastering the Market Cycle

Oaktree Capital کے شریک بانی اور شریک چیئرمین ہوورڈ مارکس کا شمار دنیا کے چند کامیاب ترین سرمایہ کاروں میں ہوتا ہے۔ مارکس اور ان کے ساتھی عالمی مالیاتی بحران کے عروج پر 10ارب ڈالر کے اثاثہ جات خریدنے کے حوالے سے شہرت رکھتے ہیں، جس پر بعد میں انھوں نے اپنے کلائنٹس کے لیے 6ارب ڈالر اور اپنے لیے 1.5ارب ڈالر منافع حاصل کیا۔ اس کتاب میں وہ ایسے طریقے بتاتے ہیں، جن کے ذریعے مارکیٹ سائیکل کے مختلف اسٹیجز کو بہتر طور پر سمجھا اور کسی بھی وقت مارکیٹ کے موجودہ اسٹیج کا تعین کیا جاسکتا ہے۔

Great at Work

مارٹن ٹی ہانسن نے یہ کتاب لکھنے سے پہلے 5ہزار سے زائد منیجرز اور ملازمین کے انٹرویوز کیے، جس سے انھوں نے یہ اخذ کیا کہ دفاتر میں اعلیٰ کارکردگی کا مظاہرہ کس طرح کیا جاسکتا ہے۔ ہانسن، یونیورسٹی آف کیلی فورنیا میں مینجمنٹ پروفیسر ہیں اور ان انٹرویوز کی بنیاد پر اس کتاب میں انھوں نے کام کو بہتر طور پر انجام دینے کی 7عادات پر بات کی ہے۔ ان میں ایک عادت یہ بھی ہے کہ کئی لوگ جب اپنے کام پر توجہ مرکوز نہیں رکھ پاتے تو وہ اپنے ’باس‘ کو موردِ الزام ٹھہراتے ہیں، اس سلسلے میں وہ کتاب میں کہتے ہیں؛ Stop blaming your boss۔ وہ مزید یہ بھی بتاتے ہیں کہ آپ اپنے باس کی جانب سے آپ کو تفویض کردہ چند ذمہ داریوں سے انکار کرنا بھی سیکھیں۔ ’میں اپنے پاس پہلے سے موجود پراجیکٹس میں اچھی کارکردگی دِکھانا چاہتا ہوں‘، اپنے باس کو وضاحت پیش کریں۔


LEADERS: Myth And Reality

اسٹینلی مک کرسٹل امریکی افواج سے 2010ء میں ریٹائر ہوئے۔ 

یہ کتاب ’لیڈرشپ‘ سے متعلق آپ کی روایتی اور کتابی سوچ کو جھنجھوڑ کر رکھ دے گا۔ 

مؤثر لیڈرشپ کے بیانیے میں انھوں نے اپنے ذاتی تجربات کو بھی انتہائی مؤثر انداز میں شامل کیا ہے۔


The Job

ایلن روپیل شیل ایک صحافی ہیں۔ وہ اپنی وسیع تحقیق اور رپورٹنگ سے حاصل ہونے والے علم کی بنیاد پر اس کتاب میں بتاتے ہیں کہ کام کی دنیا کس طرح بدل رہی ہے۔ اپنی کتاب میں ایک جگہ کہتے ہیں، ’آپ اپنے کام میں بہت زیادہ مطلب تلاش کرنے کی کوشش نہ کریں، کیونکہ ہوسکتا ہے کہ جب آپ وہ کام چھوڑ دیں تو آپ کو محسوس ہو کہ جیسے آپ کی شناخت گم ہوگئی ہے‘۔ وہ یہ بھی کہتے ہیں کہ زیادہ تعلق کے حصول کا مطلب یہ نہیں ہے کہ آپ زیادہ آمدنی یا زیادہ کامیابی حاصل کریں گے، حالانکہ ان میں تعلق کو یکسر رد نہیں کیا جاسکتا۔ اس سلسلے میں وہ کہتے ہیں کہ آپ جس کسی بھی شعبہ سے وابستہ ہیں، آپ اس شعبہ میں کامیابی کے لیے مطلوب ہنر ضرور سیکھیں، کیونکہ مطلوبہ ہنر میں کمی آپ کی شناخت اور کامیابی پر اثرانداز ہوگی۔

تعلیم سے مزید