آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
منگل21؍شوال المکرم 1440ھ 25؍جون 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

چینلز پر رات 8سے 12 پیمرا کوڈ آف کنڈکٹ کیخلاف ورزی ہوتی ہے، عدالت

اسلام آباد (نمائندہ جنگ) اسلام آباد ہائی کورٹ نے پشتون تحفظ موومنٹ اور گلالئی اسماعیل کی میڈیا کوریج اور سوشل میڈیا پر پابندی کی درخواستوں پرڈی جی آپریشنز پیمرا کو30 جون کو ذاتی حیثیت میں طلب کر لیا ہے۔ عدالت عالیہ اسلام آباد کے جسٹس عامر فاروق نے ریمارکس دئیے کہ پیمرا اور نیب جیسے اداروں سے تحریری جواب طلب کرنے کا مطلب ہے کہ دو تین مہینے تو گئے ، کرنل (ر) جاوید اقبال کی جانب سے دائر درخواستوں کی سماعت گزشتہ روز عدالت عالیہ کے جسٹس عامر فاروق نے کی۔ اس موقع پر ڈی جی انٹرنیٹ پروٹوکول پی ٹی اے انصار احمد عدالت میں پیش ہوئے اور بتایا کہ بیرون ممالک کے سوشل میڈیا ٹولز پر سیکیور سائٹس کو پاکستان سے بند نہیں کیا جا سکتا۔ فاضل جسٹس نے کہاکہ پیمرا کا کوئی افسر پیش کیوں نہیں ہوا؟ وہ بھی اسی طرح عدالت کو آگاہ کریں جیسے پی ٹی اے کے نمائندہ نے کیا۔ جسٹس عامر فاروق نے ریمارکس دیے کہ اگر پیمراکوڈ آف کنڈکٹ پر عملدرآمد کو یقینی بنائے تو اس طرح کے مسائل پیدا ہی نہ ہوں ، انہوں نے مزید کہا کہ کم و بیش تمام ٹی وی چینلز رات کے آٹھ بجے سے بارہ بجے تک جو دکھاتے ہیں وہ کوڈ آف کنڈکٹ کی خلاف ورزی ہے۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں