آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
بدھ 15؍ربیع الاوّل 1441ھ 13؍نومبر 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
تازہ ترین
آج کا اخبار
کالمز

انڈیا ہاٹ فیورٹ، پاکستان دلیری سے کھیلے، پاک بھارت ٹاکرا

کراچی (ٹی وی رپورٹ)جیو کے ’’پاک بھارت ٹاکرا‘‘ میں میزبان اور تجزیہ کار شاہزیب خانزادہ نے کہا کہ کرکٹ کی دنیا کا سب سے بڑا مقابلہ کھیلوں کی دنیا کا سب سے بڑا مقابلہ پاکستان اور انڈیا میں ہونے جارہا ہے پاکستان بھارت کو ورلڈ کپ میں کبھی ہرا نہیں پایا ہے ساتھ ہی بھارت کی ٹیم اس وقت ہاٹ فیورٹ ہے دنیا کی بہترین ٹیموں میں سے ایک ٹیم ہے پاکستان کی جو حالیہ پرفارمنس ہے اس پر سوال بھی اٹھتا رہا ہے مگر پاکستان کی ٹیم سرپرائز کرسکتی ہےیہ میچ بہت زیادہ اہم ہے پاکستان کی ہرانے کی پوری صلاحیت رکھتا ہے کیا کیا فیکٹر ہوسکتے ہیں کہ یہ ٹاکرا ایک بڑا زبردست ٹاکرا ثابت ہو اور پاکستان جیتے بھی اس پر بات کریں گے۔ پروگرام میں پاکستان اور بھارت کے سابق کرکٹرز نے کہا کہ بھارت کی ٹیم پاکستان کی ٹیم سے کہیں آگے ہے ،کرکٹ میں کچھ بھی ہو سکتا ہے ،کرکٹ دبائو والا گیم ہے،پاکستان دلیری سے کھیلے۔ شاہزیب خانزادہ نے کہا کہ ہمارے ساتھ کراچی میں موجود ہیں محمد یوسف ، عبدالرزاق سکندر بخت وسیم اکرم ہمیں مانچسٹر سے جوائن کر

رہے ہیں ساتھ ہی انڈیا سے دہلی اسٹوڈیو پینل موجود ہے شویتا سنگھ کی میزبانی میں محمد اظہر الدین اور مدن لال کا آپ تینوں کو خوش آمدید کہتے ہیں ساتھ ہی وکرانت گپتا ہمیں مانچسٹرسے جوائن کر رہے ہیں ان کے ساتھ ہوں گے سنیل گواسکر اور ہربجھن سنگھ سنی بھائی وکرانت بھائی آپ کو ہم خوش آمدید کہتے ہیں اور ٹاکرا کا آغاز کرتے ہیں اس پروگرام کا آغاز کرتے ہیں۔ شویتا سنگھ نے کہا کہ دو ایسی ٹیمیں جب بھڑتی ہیں تو صرف ان دونوں دیشوں کی نظریں نہیں ہوتیں سب کی نظریں ہوتی ہیں دنیا میں سب سے زیادہ دیکھے جانے والا مقابلہ کہیں تو یہ غلط نہیں ہوگا تو آپ سمجھ لیجئے اتنے بھاری بھرکم مقابلے کے لئے اتنا بھاری بھرکم پینل ہمارے ساتھ ہے ۔اظہرالدین نے کہاکہ جی بالکل دیکھئے جہاں تک میں سوچتا ہوں کہ بھارت کی ٹیم پاکستان کی ٹیم سے کہیں درجے آگے ہیں اور میں سمجھتا ہوں کہ پاکستان کی ٹیم جو میچز جو کھیلے ہیں ان کی اتنا اچھا پرفارمنس رہا ہے اگر انگلینڈ کا گیم دیکھا جائے انگلینڈ کے خلاف جیسے کھیلا اگر ویسا کھیلیں گے ہندوستان کے ساتھ جب ٹف مقابلہ ہوگا ورنہ میں تو سمجھتا ہوں کہ اتنا آسان نہیں ہوگا ۔مدن لال نے کہا کہ پچاس اوور کو predict کرنا بہت مشکل ہے پر یہ ہے کہ پچھلے فیگرز دیکھے جائیں جیسے بھارت کی ٹیم کھیل رہی ہے جیسے ورلڈ کپ میں انہوں نے دو میچز کھیلے ہیں تو ایسے لگ رہا ہے کہ فیورٹ جو ہے وہ انڈیا بن جاتا ہے جیسے ہماری پرفارمنس رہی ہے دو تین میچوں میں اس کے حساب سے کہہ رہا ہوں۔سنیل گواسکرنے کہا کہ یہاں جو ویدر فورکاسٹ ہو رہا ہے وہ کہہ رہے ہیں کہ اتوار کو بھی کافی برسات ہونے کی پیش گوئی ہے اس کا مطلب یہ بھی ہوسکتا ہے کہ جس کا اتنا انتظار ہو رہا تھا بھارت اور پاکستان کے بیچ میں جو ورلڈ کپ کا میچ تو شاید کل جیسے انڈیا نیوزی لینڈ کا میچ نہیں ہوا ویسے ہوسکتا ہے اور اگر میچ ہوتا ہے تو اگر پچاس اوور کا میچ ہو تو میں سمجھتا ہوں بھارت کی ٹیم کے لئے اچھا ہوگا ۔ ہربھجن سنگھ نے میں اتفاق کرتا ہوں سنی بھائی کے ساتھ پورا میچ ہوگا تو بھارت بہت اسٹارنگ ٹیم ہے چاہے وہ پہلے بیٹنگ کریں بولنگ کریں۔ وکرانت شویتا یہ بھی ہے کہ اسی موسم میں اگر آج سے یہ بھی ہوسکتا ہے بھارت کے پاس زیادہ بہتر پیس اٹیک ہو۔ وسیم اکرم نے کہا کہ یہ ملین ڈالر سوال ہے کہ پاکستان کیا کرے اس کا جواب تو میرے پاس نہیں ہے وہ کونفڈینس جب آتا ہے جب آپ جیتتے رہیں ہوم میں بھی باہر بھی جس طریقے سے انڈیا نے ورلڈ کپ اسٹارٹ کیا ہے کوئی شک نہیں ہر ڈپارٹمنٹ میں وہ یقیناً بڑے اسٹارنگ ہیں۔ محمد یوسف نے کہا کہ جو میچ ہے پاکستان انڈیا کا یہ فیورٹ کو ایک سائیڈ میں کر دیں اس میں کوئی شک نہیں انڈیا کی ٹیم اچھا کھیل رہی ہے پچھلے کچھ عرصے سے پاکستان کی ٹیم ویسے نہیں کھیل پا رہی لیکن یہ ایک دباؤ والا گیم ہے ۔سنیل گواسکر نے کہا کہ کرکٹ ہے اس میں کچھ بھی ہوسکتا ہے۔ ہربھجن سنگھ نے کہا کہ بھارت کے پاس بیٹنگ ہے اس میں کوئی شک نہیں ہے کیال بڑے اچھے کھلاڑی ہیں ٹیکنیکلی ساؤنڈ ہیں ایک جو پریکٹس گیم ہوا تھا سو بھی بنایا تھا لیکن جو شیکھر دھون شیکھر دھون ہے ان کی تھوڑی سی کمی تو محسوس ہوگی کیوں کہ وہ لگاتار پرفارم کرتے آرہے ہیں۔ وکرانت نے کہا کہ کبھی ایسا بھی ہوتا ہے کہ انڈیا پاکستان کا میچ ہے اور آپ فیک ایگریشن دکھاتے ہیں کئی کھلاڑی فیک ایگریشن دیکھاتے ہیں کہ میں آؤں گا بالکل تگڑا ہو کر جذبات کے ساتھ آؤں گا اور کبھی کبھی آپ نبض کو کنٹرول کرنے کی کوشش کرتے ہیں لیکن ہوتا نہیں ہے۔عبدالرزاق نے کہاکہ میرے حساب سے پہلے پاکستان کی ٹیم کو دیکھنا پڑے گا کہ مینجمنٹ کی طرف سے کتنا پریشر ہے اور ہمارے کرکٹ بورڈ کی طرف سے کتنا پریشر ہے تو پریشر گیم تو ہے جیسے سارے جتنے بھی کرکٹر ہیں وہ کرکٹ پوائنٹ آف ویو سے ہی بات کر رہے ہیں۔ سکندر بخت نے کہا کہ میچ ہوتا ہے اس دن کا ہوتا ہے آپ نے کیسا کھیلنا ہے کیسے پرفارم کرنا ہے یہ اہم ہے اگر ہم یہ سوچ کے بیٹھ جائیں کہ پچھلا میچ ہم نے ہرایا تھا ایشیا کپ مین انڈیا سے دو دفعہ ہار گئے ہیں ایک ہم جیت چکے ہیں اس پر کوئی نہیں جاتا اس دن کی بات ہوگی یعنی جو اتوار کو میچ ہوگا اس پر فیصلہ ہوگا ۔ عبدالرزاق نے کہا کہ میں سیدھی بات کروں گامیں ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کو ترجیح دیتااور جب بڑے میچ ہوتے ہیں پریشر میں میچ ہوتے ہیں بڑے میچ میں ہمیشہ پہلے بیٹنگ کرنی چاہئے۔

اہم خبریں سے مزید