آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
جمعہ 15؍ ذیقعد 1440ھ19؍جولائی 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

سپریم کورٹ میں ایک کیس کی سماعت کے دوران جسٹس گلزار احمد نے ریمارکس دیئے کہ سندھ کرپشن میں ڈوبا ہوا ہے،بجٹ کا ایک پیسہ بھی سندھ میں خرچ نہیں ہوا،لاڑکانہ میں ایچ آئی وی نے برا حال کردیا ہے، کوئی پوچھنے والا نہیں،اب یہ اتنا بڑھے گا کہ پورا لاڑکانہ اس کی لپیٹ میں آجائے گا۔

سپریم کورٹ میں جسٹس گلزار احمد کی سربراہی میں سکھر میں اراضی کیس کی سماعت ہوئی۔

دوران سماعت جسٹس گلزار احمد نے ریمارکس دیے کہ دنیا کا کوئی ایسا شہرنہیں جہاں 50 ڈگری کے باوجود کثیرالمنزلہ عمارتیں ہوں، سکھر کے گرم شہر میں کثیرالمنزلہ عمارتیں بنادی گئیں لیکن سہولتیں نہیں، لوگوں کو پانی میسر نہیں اور رات کو بجلی کے بغیر سوتے ہیں، بنیادی ضروریات سے محروم لوگ تشدد پسندی کی طرف مائل،کرائم ریٹ بڑھتا ہے۔

جسٹس گلزار نےمیئر کراچی کو کہا کہ میئر سکھر آپ بھی جاگ جائیں جس پر جسٹس گلزار نے کہا کہ آپ کے ماسٹر پلان کی ایسی کی تیسی، آپ سب لوگ سسٹم کا حصہ ہیں اور جانتے ہیں کہ سسٹم کیا ہے۔

بعد ازاں عدالت نے سماعت دو ہفتوں کیلئے ملتوی کردی۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں