آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
جمعہ 15؍ ذیقعد 1440ھ19؍جولائی 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

پاکستان پیپلز پارٹی کے مشیر اطلاعات قانون و اینٹی کرپشن سندھ بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے کہا ہے کہ وفاق کو کراچی والوں کے ساتھ سودے بازی نہی کرنی چاہئے۔

بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے کراچی میں پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ وزیر اعظم عمران خان نیازی صاحب نےسندھ سے اسپتال واپس لے کر اسپتالوں کا کچومر نکال دیا ہے، سندھ کے گورنر بھی صوبے کے لیے کچھ نہیں کرپارہے،گورنر صاحب کب تک کراچی والوں کے ساتھ مذاق کریں گے۔

مرتضیٰ وہاب نے کہا کہ پی ٹی آئی نے پیسے کے علاوہ باقی سب کچھ لگا دیا ہے، پی ٹی آئی حکومت نے کراچی میں ایک بس نہیں چلائی ۔

انہوں نے کہا کہ کراچی والے جانتے ہیں وفاقی حکومت نے سندھ کو چونا لگایا ہے، پی ایس ڈی پی سے کراچی کی کئی اسکیمیں نکال دی گئیں ، وفاقی بجٹ میں162 ارب کا کہیں ذکر نہیں ہے۔9 اسکیموں کا ذکرکیا گیا جسکا کل حجم 162 ارب روپے کے بجائے 12.5ارب روپے بنتا ہے۔ 19 میں سے 13 اسکیمیں نواز دور کی ہیں۔

مرتضیٰ وہاب نے میئر کراچی پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ میئر کراچی کو گاڑی خریدنے کا اختیار ہے، باہر گھومنے کا اختیار ہے، گھر خریدنے کا اختیار ہے پر کام کرنے کا اختیار نہیں، سابق ڈپٹی میئر کراچی ارشد وہرا کا بیان ریکارڈ پر ہے، اگرکسی سے بھی پوچھیں گے کراچی کوکس نے تباہ کیا آپ کو پتا چل جائے گا۔

کراچی کے 3 اسپتال سندھ حکومت سے جو واپس لیے انکے لیے وفاق نے بجٹ میں ایک ٹکہ نہیں رکھا،سندھ حکومت نے ان3 اسپتالوں کے لئے 16 ارب روپے مختص کئے ہیں۔کاغذی طورپران اسپتالوں کا کنٹرول وفاق نے سنبھال لیاہے۔

مرتضیٰ وہاب نے پی پی کی اعلیٰ قیادت سے متعلق بات کرتے ہوئے کہا کہ اسپیکر نے فریال بی بی کیلئے پروڈکشن آرڈر جاری کر دئیے ہیں، امید ہے نیب ان کواجلاس میں شرکت کیلئے ضرور لائے گی۔

اُنہوں نے مزید کہا کہ گورنر سندھ آئینی عہدہ ہے، اس طرح اسپیکر بھی آئینی عہدا رکھتے ہیں،گورنر کو عہدے کااحترام رکھنا چاہئے۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں