آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
جمعہ24؍ ربیع الاوّل 1441ھ 22؍ نومبر 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
تازہ ترین
آج کا اخبار
کالمز

پچھلے چند دن بہت زیادہ مایوس کن تھے، محمد حفیظ

پاکستان کرکٹ ٹیم کے سینئر کھلاڑی اور بیٹسمین محمد حفیظ نے کہا ہے کہ بطور ٹیم اگلے چیلنج کی تیاری کر رہےہیں، لندن میں میڈیا سے گفتگو سے کرتے ہوئے انکا کہنا تھا کہ پچھلے کچھ دن بہت زیادہ مایوس کن اور تکلیف دہ تھے۔




ہم بطور ٹیم اچھا نہیں کھیلے ، بری پرفارمنس کا ذمہ دار ہر کوئی ہے، محمد حفیظ کا کہنا تھا کہ  کھلاڑیوں پر ذاتی حملے کرنا ٹھیک نہیں،بھارت سے ہار کا ہم کو بھی اتنا ہی دکھ ہے جتنا کسی اور کو ہے۔

انھوں نے کہا کہ شعیب ملک خراب کارکردگی کے باوجود بھی مثبت انداز میں تیاری کررہے، ٹورنامنٹ میں اب بھی چانس باقی ہے، اچھی کرکٹ کھیلیں گے۔

اولڈ ٹریفورڈ میں بھارت کے خلاف ورلڈ کپ کے اہم ترین میچ سے قبل وزیر اعظم عمران خان نے پاکستانی کرکٹ ٹیم کو مشورہ دیا تھا کہ ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کریں ۔تاہم پاکستانی ٹیم نے ٹاس جیت کر پہلے فیلڈنگ کی۔ اس پر محمد حفیظ کا کہنا تھا کہ ہم نے اچھی بولنگ نہیں کی۔انھوں نے ٹیم انتظامیہ اور سرفراز احمد کے فیصلے کا دفاع کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ مشترکہ فیصلہ تھا کسی ایک کا نہیں۔

محمد حفیظ نے کہا، میں ہوں یا شعیب ملک ٹیم کی بہتری کیلئے کھیلتے ہیں ، جب ہارتے ہیں تو گروپنگ کی باتیں کی جاتی ہیں ،ٹیم میں گروپنگ کا معاملہ فضول باتیں ہیں،جب ٹیم فتح یاب ہوتی  ہے تب کوئی گروپنگ کی بات کیوں نہیں کرتے۔

ہم نے میچ میں خراب بولنگ کی۔ شکست کی ذمے داری کسی ایک کو نہیں دےسکتے کھلاڑی کوچز اور تمام سپورٹ اسٹاف بری کارکردگی کے ذمے دار ہیں۔

ایسی تنقید نہ کی جائے کہ ہم ٹوٹ جائیں محمد حفیظ سے دریافت کیا گیا کہ بھارت کے خلاف میچ میں آپ نے ٹاس جیت کر فیلڈنگ کی اور وزیر اعظم عمران خان کے مشورے کو بھی نظر انداز کیا۔

سابق کپتان نے کہا کہ یہ پوری ٹیم کا فیصلہ تھا۔میں کھلاڑی کی حیثیت میں اپنی انتظامیہ کے فیصلے کی حمایت کرتا ہوں اور یہ سب کا مشترکہ فیصلہ تھا میچ کے بعد جو چاہے کہہ لیں۔کنڈیشن کے مطابق درست فیصلہ تھا ہم نےبولنگ اچھی نہیں کی اور ٹاس کا فیصلہ حالات کو دیکھ کر کیا جاتا ہے لیکن ٹوئیٹس پڑھ کر کوئی فیصلہ نہیں کرتا ہے۔نہ رائے تبدیل کرتا ہے ہم نے ٹاس جیت کر خراب بولنگ کی۔کپتان اور ٹیم انتظامیہ کا فیصلہ درست تھا ۔

پاکستان کرکٹ میں کوئی ایک نہیں سب برابر کے ذمے دار ہیں۔پاکستان ٹیم کو آگے جانے کے لئے ہمیں ذمے دار ی لینا ہوگی اور احتساب کے لئے خود پیش کرنا ہوگا۔

کبھی ایک دو کو ذمے دار نہیں ٹھہرانا چاہیے۔ ورلڈ کپ کا سفر اچھا نہیں رہا، جس کی وجہ سے ہمیں شدید دکھ اور تکلیف تھی لیکن زندگی آگے بڑھنے کانام ہے ہم نے یہی تہیہ کیا ہے کہ سفر کا آغاز خراب ہوا ہے اختتام اچھا ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ پوائنٹس ٹیبل پر سب سے نیچے دیکھ کر دکھ ہورہا ہےماضی میں ہم اسی طرح گر کے اٹھتے ہیں اور آئندہ میچوں میں یہ ٹیم مختلف ہوگی۔محمد حفیظ نے کہا کہ پاک بھارت میچ میں جذبات بہت ہوتے ہیں۔ہمیں افسوس ہے کہ بھارت سے ہارے ہیں۔کوشش کریں گے پاکستان کے لئے بہترین نتائج لائیں۔

کھیلوں کی خبریں سے مزید