آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
پیر18؍ذیقعد 1440ھ22؍جولائی 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

اسلام آباد میں مولانافضل الرحمان کی زیرصدارت آل پارٹیز کانفرنس جاری ہے، مولانا فضل الرحمان نے اپوزیشن کو اجتماعی استعفوں کی تجویز دے دی، ساتھ ہی 25 جولائی کو یوم سیاہ منانے کا بھی مشورہ دے دیا۔


مولانا فضل الرحمان کی رہائشگاہ پر جمعیت علماء اسلام کے زیر اہتمام اے پی سی میں شرکت کے لیے قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف اپنے پارٹی وفد کے ہمراہ شریک ہیں، جبکہ پیپلز پارٹی، عوامی نیشنل پارٹی اور قومی وطن پارٹی کے وفود بھی موجود ہیں۔

ذرائع کا بتانا ہے کہ اے پی سی میں حکومت مخالف تحریک اور بجٹ منظوری رکوانے پر مشاورت ہوگی۔

ذرائع کے مطابق مسلم لیگ ن کے وفد میں شہباز شریف اور مریم نواز کے علاوہ سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی، ایاز صادق، احسن اقبال، مرتضیٰ جاوید عباسی، مریم اورنگزیب، راناثنااللہ اور دیگر شامل ہیں۔

اے پی سی میں پیپلزپارٹی کا 5 رکنی وفد شریک ہے جبکہ بلاول بھٹو زرداری کچھ دیر میں کانفرنس میں پہنچیں گے۔

پیپلز پارٹی کے وفد میں یوسف رضا گیلانی، شیری رحمان، رضا ربانی، نیّربخاری، فرحت اللہ بابر شرکت کر رہے ہیں۔

اے پی سی میں نیشنل پارٹی کا وفد میر حاصل بزنجو کی سربراہی میں شریک ہے، عوامی نیشنل پارٹی کے سربراہ اسفند یار ولی، جماعت اہل حدیث کے رہنما علامہ ساجد میر، شاہ اویس نورانی کے علاوہ آفتاب خان شیر پاؤ بھی موجود ہیں۔

اے پی ای میں شرکت سے قبل چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے قومی اسمبلی سے خطاب میں کہا کہ علی وزیر اور محسن داوڑ کے پروڈکشن آرڈر جاری کیے جائیں تاکہ ایوان مکمل ہو، حکومت میں ہوں یا اپوزیشن میں ہم سب ایوان کے ارکان ہیں۔

انہوں نے اسپیکر اور پی ٹی آئی ارکان سے اپیل کی کہ دونوں ارکان کے پروڈکشن آرڈر جاری کرنا بہت ضروری ہیں تاکہ دونوں ارکان اسمبلی ایوان میں آکر اظہار خیال کریں۔


Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں