آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
منگل 21؍ربیع الاوّل 1441ھ 19؍نومبر 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
تازہ ترین
آج کا اخبار
کالمز

آئی سی سی کرکٹ ورلڈ کپ کے 33ویں میچ میں نیشام اور گرینڈہوم کی شاندار بیٹنگ کی بدولت نیوزی لینڈ نے پاکستان کو جیت کے لئے 238 رنز کا ہدف دیا ہے۔

ایک موقع پر نیوزی لینڈ کی آدھی ٹیم صرف 83 رنز پر پویلین لوٹ چکی تھی لیکن نیشام اور گرینڈہوم نے چھٹی وکٹ کی شراکت میں 132 رنز بناکر ٹیم کو مشکل صورتحال سے نکالا۔

نیشام نے 97 اور گرینڈہوم نے 64 رنز کی اننگز کھیلی۔

برمنگھم میں محمد عامر نے میچ کے دوسرے اور اپنے پہلے ہی اوور میں مارٹن گپٹل کو کلین بولڈ کیا، وہ صرف 5 رنز بناسکے۔

کولن منرو کو 12 رنز پر شاہین آفریدی نے پویلین کی راہ دکھائی، راس ٹیلر صرف 3 رنز بناسکے، ٹیلر کو سرفراز احمد نے شاہین آفریدی کی گیند پر شاندار کیچ لے کر آؤٹ کیا۔

نئے آنے والے بیٹسمین لیتھم بھی پاکستانی بولرز کے سامنے نہ ٹھہر سکے اور 14 گیندوں پر صرف ایک رن بناکر شاہین آفریدی کی گیند پر سرفراز کو کیچ دے بیٹھے۔

مشکل صورتحال میں کپتان ولیمسن اور نیشام نے نہ صرف وکٹیں گرنے کے سلسلے کو روکا بلکہ پانچویں وکٹ کی شراکت میں 37 رنز بناکر اسکور 83 تک پہنچادیا۔

اس موقع پر شاداب خان نے ولیمسن کو 41 رنز پر پویلین بھیج دیا۔

نیشام اور گرینڈہوم نے پاکستانی بولرز کے سامنے بھرپور مزاحمت کی اور چھٹی وکٹ کی شراکت میں 132 رنز جوڑ کر ٹیم کو مکمل تباہی سے بچالیا۔

گرینڈہوم 64 کے اسکور پر مشکل رن لینے کی کوشش میں وکٹ گنوا بیٹھے۔ نیشام نے 97 رنز کی ناقابل شکست اننگز کھیلی، یوں نیوزی لینڈ نے مقررہ 50 اوورز میں 6 وکٹوں کے نقصان پر 237 رنز بنائے۔

شاہین شاہ آفریدی نے 3 جبکہ محمد عامر اور شاداب خان نے ایک، ایک وکٹ حاصل کی۔

نیوزی لینڈ کی ٹاس جیت کر بیٹنگ

اس سے قبل کرکٹ ورلڈ کپ کے 33 ویں میچ میں نیوزی لینڈ نے پاکستان کے خلاف ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا۔

سیمی فائنل میں پہنچنے کیلئے گرین شرٹس کو اس میچ سمیت اگلے 3 میچز لازمی جیتنے ہیں جبکہ نیوزی لینڈ آج کے میچ کی فتح کے بعد سیمی فائنل میں جانے والی دوسری ٹیم بن سکتی ہے۔

برمنگھم میں صبح ہونے والی بارش کے بعد وکٹ گیلی ہونے کی وجہ سے ٹاس ایک گھنٹہ تاخیر سے کیا گیا، لیکن میچ میں اوورز کم نہیں کیے گئے ہیں۔

نیوزی لینڈ کے خلاف میچ کیلئے قومی ٹیم میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی ہے۔

ٹیم کی قیادت سرفراز احمد کر رہے ہیں جبکہ دیگر کھلاڑیوں میں فخر زمان، امام الحق، بابر اعظم،محمد حفیظ،حارث سہیل، شاداب خان، محمد عامر، شاہین آفریدی، وہاب ریاض اور عماد وسیم شامل ہیں۔

نیوزی لینڈ کا پاکستان کیخلاف پہلے بیٹنگ کا فیصلہ
پاکستان اسکواڈ

کرکٹ ورلڈ کپ مقابلوں کی تاریخ کا جائزہ لیا جائے تو ورلڈکپ میں نیوزی لینڈ کیخلاف ٹیم پاکستان کا پلڑا بھاری ہے، دونوں ٹیمیں اب تک ورلڈکپ میں 8 بار مدمقابل آچکی ہیں جن میں سے پاکستان نے 6 اور نیوزی لینڈ نے صرف 2 میچز جیتے ہیں۔

نیوزی لینڈ اب تک ایونٹ کی ناقابل شکست اور مضبوط ترین ٹیم ثابت ہوئی ہے، جبکہ کیوی ٹیم کے قائد کین ولیمسن کا بلا بھی ایونٹ میں رنز اگل رہا ہے۔

گزشتہ روز بارش کی وجہ سے دونوں ٹیموں نے انڈور پریکٹس کی لیکن محکمہ موسمیات کی جانب سے اچھی خبر یہ ہے کہ آج موسم خوشگوار رہے گا اور بارش کا امکان بھی نہیں ہے۔

ایونٹ میں گزشتہ روز آسٹریلیا کے ہاتھوں انگلینڈ کی شکست نے قومی کرکٹ ٹیم کی سیمی فائنل تک رسائی کی امیدوں کو زندہ رکھا ہوا ہے تاہم آج کے میچ کے بعد گرین شرٹس کو بنگلادیش اور افغانستان سے بھی نبرد آزما ہونا ہے، جبکہ میزبان ٹیم انگلینڈ کو اگلے دو میچز مضبوط حریف بھارت اور نیوزی لینڈ سے کھیلنے ہیں۔

پوائنٹس ٹیبل پر پاکستان 6 میچز کھیل کر 5 پوائنٹس کے ساتھ ساتویں پوزیشن پر ہے جبکہ نیوزی لینڈ کی ٹیم نے 6 میچز کھیل رکھے ہیں اور 11 پوائنٹس کے ساتھ دوسرے نمبر پر موجود ہے۔

کھیلوں کی خبریں سے مزید