آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
پیر 17؍ذوالحجہ 1440ھ 19؍اگست 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

پاکستان کے صوبہ خیبر پختو نخوا کی مختلف جیلوں میں بہتر علاج معالجہ کی سہولتیں نہ ہونے کے سبب کئی قیدیوں میں ایچ آئی وی، ایڈز اور ہیپاٹائٹس کا انکشاف ہوا ہے۔

سرکاری دستاویزات کے مطابق خیبرپختونخوا کی جیلوں میں درجنوں قیدی ایچ آئی وی کے مرض میں مبتلا ہیں جبکہ ان کی تعداد میں اضافے کے خدشات موجود ہیں۔

صوبے کی مختلف جیلوں میں12قیدی ایچ آئی وی ایڈز کا شکار ہیں۔پشاور سینٹرل جیل میں 3قیدی ، مردان جیل میں 2 ،ڈی آئی خان، بنوں اور تیمرگرہ کی جیلوں میں ایک ایک قیدی ایڈز کا شکار ہے جبکہ جیلوں میں ہیپاٹائٹس بی اور سی کے مریضوں کی تعداد بھی بڑھنے لگی ہے۔

دستاویزات کے مطابق صوبہ کی جیلوں میں 71 ہیپاٹائٹس سی جبکہ 25 قیدی ہیپاٹائٹس بی میں مبتلا ہیں۔

پشاور سینٹرل جیل میں 29 قیدی ہیپاٹائٹس سی کا شکار ہیں۔ اسی طرح مردان میں 12 ، بنوں، ہری پور، صوابی میں 6،6 قیدی جبکہ کوہاٹ میں 5 ،تیمرہ گرہ، ڈگرکی جیلوں میں ایک، ایک قیدی ہیپاٹائٹس سی کا شکار ہیں۔

صحت سے مزید