آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
ہفتہ16؍ربیع الثانی1441ھ 14؍دسمبر 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
تازہ ترین
آج کا اخبار
کالمز

’پاکستان کیلئے 18سے 24 ماہ چیلنج کی حیثیت رکھتے ہیں‘

یونی لیور پاکستان کی سی ای او شازیہ سعید نے کہا ہے کہ پاکستان کے لئے اگلے 18سے 24ماہ چیلنج کی حیثیت رکھتے ہیں۔

ایک انٹرویو میں شازیہ سعید نے کہا کہ پاکستان کی معیشت کو متحرک کرنے کی ضرورت ہے،اگلے 24ماہ پاکستان کے لئے چیلنج کی حیثیت رکھتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اس دوران بنیادی عوامل درست سمت میں رہے تو ان کے خیال میں معاشی حالات بہتر ہوسکتے ہیں۔

شازیہ سعید کے مطابق وزیراعظم کے لیے ان کا پیغام یہی ہے کہ حکومت اس عرصے میں اعتماد سازی کے اقدامات کرے، پیداوار ی شعبے میں بے یقینی کی کیفیت کو ختم کرنا ہوگا۔

ان کا کہنا تھا کہ یونی لیور پاکستان کی 2018ء میں سیلز 1کھرب 27 ارب روپے تھی جو گزشتہ مالی برس کے مقابلے میں 9فیصد زائد رہی،اس کا منافع 34فیصد اضافے کے ساتھ 17 ارب 70کروڑ روپے رہا۔

شازیہ سعید نے مزید کہا کہ ان کی کمپنی نے سالانہ پیداوار کا ہدف ڈبل ڈیجٹ میں لے جانے کا فیصلہ کیا اور 5برس کے دوران یہ ہدف حاصل کیا جارہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ آئی ایم ایف پروگرام میں جانے سے پہلے ان کی کمپنی کی پیداوار سنگل ڈیجٹ پر چلی گئی کیوں کہ معاشی صورتحال کے باعث صارفین تناؤ محسوس کررہے ہیں۔

یونی لیور پاکستان کی سی ای او نے یہ بھی کہا کہ وہ کسی ایڈونچر کے موڈ میں نہیں، شاپنگ کے انداز میں بھی تبدیلی آئی ہے ،صارف اب بڑی پیکنگ کے بجائے درمیانی یا چھوٹی پیکنگ میں سامان خرید رہے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ گھریلو بجٹ میں بھی کفایت شعاری اختیار کی جا رہی ہے، اس کا نتیجہ اگلے 5برس کے دوران سالانہ پیداوار میں کمی کی صورت میں نکلے گا۔

تجارتی خبریں سے مزید