آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
اتوار 16؍ذوالحجہ 1440ھ 18؍اگست 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

  پاکستان رینجرز (سندھ) نے کراچی کے مختلف علاقوں میں کارروائی کرتے ہوئے ڈکیتی اور رہزنی میں ملوث 7 ملزمان کو گرفتار کرلیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق عوامی کالونی اور زمان ٹاؤن کے علاقوں میں رینجرز نے پولیس کے ساتھ مشترکہ کارروائی کرتے ہوئے 3 ملزمان آصف علی عرف ماموں، محمد مستقیم عرف شُترو عرف کچی، محمدخالد عرف بھانجا اور عبد الرحیم کو گرفتار کیا جو لوگوں سے لوٹ مار کرنے، ڈکیتی اور اسٹریٹ کرائم کی متعدد وارداتوں میں ملوث ہیں۔

جبکہ ماڈل کالونی اور میمن گوٹھ کے علاقوں میں رینجرز نے کارروائی کرتے ہوئے 2 ملزمان سجاد علی اور فہیم احمد کو گرفتار کیا جو ڈکیتی کی متعدد وارداتوں میں ملوث ہیں۔

اسکے علاوہ میمن گوٹھ کے علاقے میں رینجرز نے کارروائی کرتے ہوئے ملزم محمد مدثر علی خان عرف گولا کو گرفتار کیا جو علاقے میں منشیات فروشی کے کاروبار میں ملوث ہے۔ تمام ملزمان کے قبضے سے غیر قانونی اسلحہ، ایمونیشن، مسروقہ سامان اور منشیات بھی بر آمدکی گئی ہے اور انہیں مزید  قانونی کارروائی کیلئے پولیس کے حوالے کر دیا گیا ہے۔

دریں اثنا اندرون سندھ پانی چوری کے خلاف آپریشن کے دوران  پاکستان رینجرز (سندھ) نے ضلع  شہید بینظیر آباد / سانگھڑ کے علاقے چن بابو برانچ اور مین لندو کنال برانچ، ڈسٹرکٹ ٹھٹھہ کے علاقے جام برانچ RD-48 سے RD-67 اور ڈسٹرکٹ سجاول کے علاقے شوری واہ کنال RD-58 سے RD-79 کے ایریا میں پانی چوری کے لیے لگائے گئے غیر قانونی کنکشنز، موگھے اور نکوں کے خلاف محکمہ آبپاشی اور پولیس کے ساتھ مشترکہ آپریشن کیا۔

آپریشن کے دوران مجموعی طور پر 47 کلو میٹر نہری علاقے کے 60 مقامات سے پانی کے غیرقانونی کنکشن، موگھے اور نکوں کو ہٹایا گیا جبکہ27 افراد کے خلاف متعلقہ تھانوں میں ایف آئی آر بھی درج کروائی گئی۔

علاقے کے کاشت کاروں نے رینجرز، محکمہ آبپاشی اور پولیس کے اس اقدام کو بے حد سراہتے ہوئے خراجِ تحسین پیش کیا۔

قومی خبریں سے مزید