آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
پیر18؍ ربیع الثانی 1441ھ 16 دسمبر 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
تازہ ترین
آج کا اخبار
کالمز

نیشنل چیلنج کپ کا کے پی میں انعقاد خوش آئند ہے، شوکت یوسف زئی

نیشنل چیلنج کپ کے ذریعے کے پی کا سافٹ امیج دنیا بھر میں جائے گا۔ پشاور سمیت قرب و جوار کے فٹبالرز اور شائقین سے درخواست ہے کہ وہ ملک کے نامور کھلاڑیوں کی حوصلہ افزائی کیلئے گراؤنڈ میں اپنی آمد کو یقینی بناکر اس قومی ایونٹ کو کامیابی سے ہمکنار کرنے میں اپنا کردار ادا کریں۔

نیشنل چیلنج کپ کے پہلی بار خیبر پختونخوا میں انعقاد پر پاکستان فٹبال فیڈریشن کے شکر گزار ہیں کہ جس کے باعث پشاور کے مقامی فٹبالرز اور شائقین کو اپنے پسندیدہ انٹرنیشنل فٹبالرز کو ایکشن میں دیکھنے کا موقع ملا۔

ان خیالات کا اظہار شوکت علی یوسف زئی، صوبائی وزیر ہیلتھ و انفارمیشن، خیبر پختونخوا نے 28ویں نیشنل چیلنج کپ کی افتتاحی تقریب میں بحیثیت مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے کیا۔

اس موقع پر طہماس خان فٹبال اسٹیڈیم پشاور میں کھلاڑیوں اور شائقین فٹبال کی کثیر تعداد موجود تھی۔

سید اشفاق حسین شاہ صدر پاکستان فٹبال فیڈریشن نے کہا کہ اللہ تعالیٰ نے ہمیں موقع دیا تو فٹبال کے کھیل کی ترقی کیلئے ہر ممکن اقدامات کریں گے اور کھلاڑیوں کو ان کا جائز مقام دلائیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ اداروں کو چاہیے کہ وہ فٹبال کی ترقی کیلئے آگے آئیں۔

سید ظاہر علی شاہ، صدر کے پی نے  کہا کہ کے پی کے فٹبال ایسوسی ایشن کی جانب سے میں پاکستان فٹبال فیڈریشن کا انتہائی ممنون اور مشکور ہوں کہ انہوں نے پہلی بار کے پی کے کو نیشنل چیلنج کپ کی میزبانی کا اعزاز بخشا۔ انشاء ﷲ ہم فیڈریشن کے اعتماد پر پورا اترتے ہوئے اس قومی ایونٹ کو یادگار بنائیں گے۔

اس موقع پر سید فراست علی شاہ قائم مقام سیکریٹری فیڈریشن، چوہدری سلیم، ممبر فیڈریشن، شرافت حسین بخاری، باسط کمال، آرگنائزنگ سیکریٹری، شوکت مفتی، کرنل نعمان، قاضی آصف، طحہٰ علی زئی، رؤف باری، سردار طارق، گوہر زمان، رانا تنویر احمد، زمان خان، قاضی واجد، شاکر ﷲ، ظاہر شاہ، میڈیا کوارڈی نیٹر ریاض احمدبھی موجود تھے۔

افتتاحی میچ میں انٹرنیشنل پلیئر منصور احمد کی شاندار کارکردگی کی بدولت پاکستان ایئر فورس نے ایشیا گھی ملز کو 4-0 سے شکست دی۔

کھیلوں کی خبریں سے مزید