آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
بدھ19؍ ذوالحجہ 1440ھ 21؍اگست 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

کراچی میں گزشتہ ہفتے نجی ٹی وی کے اینکر مرید عباس سمیت 2افراد کے قتل میں ملوث ملزم عاطف زمان نے کہا ہے کہ میں برباد ہو چکا ہوں، اب اگر مجھے پھانسی بھی ہو جائے تو پروا نہیں ہے۔

رپورٹ کے مطابق ہفتے کو پولیس سرجن نے ملزم عاطف زمان کا طبی معائنہ کیا تھا، سٹی کورٹ میں مرید عباس قتل کیس کی سماعت کے دوران تفتیشی افسر عتیق الرحمٰن نے ملزم عاطف زمان کی ایم ایل او رپورٹ عدالت میں پیش کی۔

ایم ایل او رپورٹ میں بتایا گیا کہ ملزم عاطف زمان کو سینے کے اوپری حصے پر گولی لگی جو پشت سے باہر نکلی، تفتیشی افسر عتیق الرحمٰن نے عدالت کو بتایا کہ میں نے عاطف زمان کو بتایا کہ اگر اعترافِ جرم کرتے ہو تو تمہیں پھانسی کی سزا ہو سکتی ہے، جس پر ملزم عاطف زمان نے کہا کہ میں برباد ہو چکا ہوں، مجھے اب پھانسی بھی ہو جائے تو کوئی پروا نہیں ہے۔

عدالت نے پولیس کی جانب سے ملزم کے جسمانی ریمانڈ میں ایک روز کی توسیع کی درخواست منظور کرتے ہوئے عاطف زمان کا 164 کا بیان کل ریکارڈ کرنے کا حکم دیا جبکہ ملزم سے اس کے وکلاء اور اہل خانہ کو ملاقات کی اجازت بھی دے دی۔

واضح رہے کہ ایس ایس پی ساؤتھ کراچی شیراز نذیر کے مطابق گزشتہ دنوں عاطف زمان کے ڈرائیور نے بھی خود کشی کرنے کی کوشش کی ہے، شیراز نذیر نے بتایا کہ عاطف زمان کے ڈرائیور نے تفتیش سے تنگ آ کر خود کشی کی کوشش کی۔

انہوں نے کہا کہ ندیم کا گھر ڈسٹرکٹ ایسٹ میں ہے، اگر اس کے خلاف خود کشی کی کوشش کا مقدمہ درج ہوا تو وہ ڈسٹرکٹ ایسٹ میں ہی ہو گا۔

ایس ایس پی ساؤتھ کراچی نے کہا ہے کہ ہمیں اطلاع ملی تھی کے کسی انویسٹر نے تنگ آ کر خود کشی کی ہے، مختلف اسپتالوں سے معلوم کیا لیکن ایسا کوئی واقعہ سامنے نہیں آیا ہے، نیب کو عاطف زمان کیس میں تمام چیزوں سے آگاہ کر دیا گیا ہے۔

قومی خبریں سے مزید