آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
پیر18؍ ربیع الثانی 1441ھ 16 دسمبر 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
تازہ ترین
آج کا اخبار
کالمز

عمران خان سے ملاقات میں ٹرمپ کی مسئلہ کشمیر پر ثالثی کی پیشکش

امریکی صدر ڈونلڈٹرمپ نے وزیراعظم عمران خان سے ملاقات میں مسئلہ کشمیر پر ثالثی کی پیشکش کردی۔

وائٹ ہاؤس کے اوول آفس میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور وزیراعظم عمران خان میں ون آن ون ملاقات ہوئی۔





دونوں سربراہان مملکت کی ملاقات میں مسئلہ کشمیر، افغانستان، دہشت گردی کے خلاف جنگ،دونوں ممالک کے باہمی تعلقات میں موجود سردمہری پر بات چیت ہوئی۔

ڈونلڈ ٹرمپ نے عمران خان کو مسئلہ کشمیر پر ثالثی کی پیشکش کی اور کہا کہ بھارتی وزیراعظم نریندر مودی نے بھی مقبوضہ کشمیر کے تنازع کے حل کے لئے مجھ سے کہا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ میں پاکستان کی کوئی مدد کرسکا تو مسئلہ کشمیر پر ثالث کا کردار ادا کرنا پسند کروں گا،امریکا مسئلہ کشمیر پر پاک بھارت تعلقات بہتر کرنے میں بھی مدد کرسکتا ہے،عمران خان اگر میں کچھ کرسکتا ہوں تو آگاہ کریں۔

وزیراعظم عمران خان نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی مسئلہ کشمیر پر ثالثی کی پیشکش کا خیر مقدم کیا اور کہا کہ صدر ٹرمپ کی قیادت میں امریکا،پاکستان اوربھارت کو قریب لاسکتا ہے، ہم بھارت کے ساتھ بات چیت کے لئے تیار ہیں۔

امریکی صدر نے کہا کہ افغانستان کے معاملے پر پاکستان کے پاس وہ پاور ہے جو دیگر ممالک کے پاس نہیں،پاکستان ماضی میں امریکا کا احترام نہیں کرتا تھا،اب افغانستان میں ہماری کافی مدد کررہا ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ ہمیں سخت رویہ ختم کرکےجنوبی ایشیا میں امن و استحکام لانا چاہیے، میں شروع سے کہہ رہا ہوں، افغانستان کے مسئلہ کا فوجی حل ممکن نہیں ،اسے مذاکرات سے حل کرنا ہوگا۔

ٹرمپ نے اس پر کہا کہ میں عمران خان کی بات سے اتفاق کرتا ہوں ،افغانستان میں اپنی فوج کی تعداد کم کر رہے ہیں۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ پاکستان کے لئے امریکا بہت اہمیت رکھتا ہے، وزیراعظم کا عہدہ سنبھالنے کے بعد مجھے شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا، صدر ٹرمپ سے ملاقات کا خواہشمند تھا۔

انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان نے نائن الیون کے بعد دہشت گردی کے خلاف جنگ میں امریکا کا ساتھ دیا،اس جنگ میں پاکستان نے 70ہزار جانوں کی قربانی دی، دہشت گردی کے خلاف جنگ سے پاکستانی معیشت کو 150ارب ڈالر کا نقصان ہوا۔

وزیراعظم نے یہ بھی کہا کہ افغان تنازع کا حل صرف طالبان سے امن معاہدہ ہے،ماضی کے مقابلے میں افغان مسئلے کے حل کے لئے امن معاہدے کے زیادہ قریب ہیں۔

عمران خان نے امید ظاہر کی کہ آنے والے دنوں میں طالبان سے مذاکرات جاری رکھنے پر زور دینے کے قابل ہوں گے۔

امریکی صدر ڈونلڈٹرمپ نے کہا کہ میری اور عمران خان کی نئی قیادت آئی،پاکستان میں اب ایک عظیم لیڈر کی حکومت ہے،عمران خان مقبول ترین وزیراعظم ہیں۔

اس سے قبل وائٹ ہاؤس پہنچنے پر وزیراعظم عمران خان کا استقبال امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کیا۔

دونوں سربراہان مملکت کے درمیان گرمجوش مصافحہ اور خیر مقدمی جملوں کا تبادلہ ہوا۔

وزیراعظم عمران خان کے ہمراہ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی وائٹ ہاؤس پہنچے،عمران خان کو ٹرمپ اوول آفس لے گئے۔

عمران خان اور ڈونلڈ ٹرمپ کی تاریخی ون آن ملاقات سے قبل دونوں سربراہان مملکت نے میڈیا سے رسمی گفتگو کی۔

امریکی صدر نے اپنے بیان میں کہا کہ عمران خان سے ملاقات کو خوشگوار دیکھ رہا ہوں، امید ہے دونوں ملکوں کے درمیان تعلقات بہتر ہوں۔

ون آن ون ملاقات کے بعد دونوں سربراہان میں وفود کی سطح پر بھی بات چیت ہوگی،جس میں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ،وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی و دیگر موجود ہوں گے۔

قومی خبریں سے مزید