آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
جمعہ 21؍ ذوالحجہ 1440ھ23؍اگست 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

پی سی بی میں چیف ایگزیکٹیو آفیسر کا نیا عہدہ متعارف، چیئرمین کے کئی اختیارات واپس

کراچی(اسٹاف رپورٹر)پاکستان کرکٹ بورڈ کے نئے آئین میں منیجنگ ڈائریکٹر کی جگہ چیف ایگزیکٹیو آفیسر کا نیا عہدہ متعارف کرایا گیا ہے۔چیف ایگزیکٹو کو بااختیار بنادیا گیا ہےچیئرمین کے بہت سارے اختیارات سی ای او کے پاس چلے جائیں گے۔قومی ٹیم کے اعلان میں چیئرمین سے حتمی منظوری کا اختیار واپس لے لیا گیا ہے اسی طرح کپتان اور نائب کپتان کو تقرر بھی اب چیئرمین کے پاس نہیں رہے گاالبتہ سی ای او چیئرمین سے مشاورت کرتے رہیں گے۔1995 سے گذشتہ بارہ سال میں چار بار آئین تبدیل ہوا ہے۔بورڈ آف گورنرز کی تشکیل تین ماہ میں ہوگی۔جبکہ صوبائی ایسوسی ایشن میں پہلے مرحلے میں نامزدگی بورڈ کرے گا جس کے بعدانتخابات کے ذریعے نئے عہدیداران کا تقرر کیا جائے گا۔احسان مانی 2014کے جس آئین کے ذریعے پی سی بی کے چیئرمین بنے تھے وہ آئین تبدیل ہوگیا ہے۔پی سی بی میں کارپوریٹ کلچر لانے کے لئے تین آزاد ڈائریکٹرز کا تقرر کیا جائے گا جو بورڈ آف گورنرز کے بھی رکن ہوں گے۔ڈپارٹمنٹس اور ریجن کے نمائندے اب بورڈ آف

گورنرز کا حصہ نہیں رہیں گے۔وفاقی کابینہ نے پاکستان کرکٹ بورڈ کے آئین 2020 کی منظوری دے دی ہے۔ پی سی بی کے نئے آئین کے مطابق چیئرمین اور چیف ایگزیکٹو کے اختیارات کو الگ الگ کر دیا گیا ہے ۔ پی سی بی کے نئے آئینی مسودے کے مطابق کرکٹ بورڈ میں چھ صوبائی کرکٹ ایسوسی ایشنز ہوں گی، کرکٹ ایسوسی ایشنز میں بلوچستان ، سنٹرل پنجاب ، خیبر پختونخوا، سندھ اور سدرن پنجاب کی ٹیمیں شامل ہوں گی ۔ نئے آئین کے مطابق بورڈ آف گورنرز میں 3 کرکٹ ایسوسی ایشنز کے صدور شامل ہوں گے۔

اسپورٹس سے مزید