آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
جمعرات17؍ صفرالمظفّر1441ھ 17؍ اکتوبر 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
تازہ ترین
آج کا اخبار
کالمز

ایڈورڈ سنوڈن کا فرانس میں سیاسی پناہ کا دعویٰ

امریکی انٹیلیجنس کے سابق سربراہ کے ہفتہ کو شائع ہونے والے ایک انٹرویو کے مطابق وائٹل بلور ایڈورڈ سنوڈن فرانس میں سیاسی پناہ کا دعویٰ کرنا چاہتے ہیں۔

امریکی انٹیلیجنس کے سابق سربراہ 11/9 کے بعد کی امریکی نگرانی کے دائرہ کار کو ظاہر کرنے والے خفیہ دستاویزات کے اخراج کے بعد سے روس میں ہیں، سنوڈن نے سابق صدر فرانسوا اولاند کے ماتحت 2013 میں فرانسیسی سیاسی پناہ کے لیے درخواست دے دی تھی۔

سنوڈن نے فرانس انٹر ریڈیو کو بتایا کہ ’اُنہیں امید ہے کہ صدر ایمانوئل میکرون اُن کی درخواست منظور کریں گے۔‘

سنوڈن نے انٹرویو کے ایک ٹریلر میں کہا کہ’اِس ساری کہانی کی سب سے افسوسناک بات یہ ہے کہ ایک ہی جگہ پر امریکی سیٹی پھونک کے سُننے کا موقع صرف یورپ میں نہیں بلکہ یہاں روس میں بھی ہے۔‘

انہوں نے کہا کہ ’آج تک ایک درجن سے زیادہ مُمالک نے 36 سالہ قدیم ملک کی درخواستوں کو مسترد کیا ہے جس کی وجہ سے وہ اُن کی اِستدلال اور ’ہم جس نظام میں رہتے ہیں‘ پر سوال اٹھاتے ہیں۔‘

اُن کا کہنا تھا کہ ’سیٹی بجانے والوں کی حفاظت کرنا کوئی معاندانہ فعل نہیں ہے۔‘

 اُنہوں نے کہا کہ منگل کو سنوڈن کی یادیں تقریباً 20 مُمالک میں شائع ہونے والی ہیں۔

 دوسری جانب اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر ایک ویڈیو میں سنوڈن نے گزشتہ ہفتے کہا تھا کہ’اب ہم جو کچھ بھی کرتے ہیں وہ ہمیشہ کے لیے زندہ رہتا ہے، اس لیے نہیں کہ ہم یاد رکھنا چاہتے ہیں بلکہ اس وجہ سے کہ اب ہمیں فراموش کرنے کی اجازت نہیں ہے۔‘

انہوں نے کہا کہ ’اس نظام کو بنانے میں مدد کرنا میرا سب سے بڑا افسوس ہے۔‘

واضح رہے کہ سنوڈن نے ایک بار نیشنل سیکیورٹی ایجنسی کے علاوہ سی آئی اے کے لیے بھی کام کیا تھا لیکن وہ 2013 میں ہزاروں دستاویزات کے اخراج کے بعد سے روس میں مقیم تھے، امریکا نے اُن پر قومی سلامتی کو خطرے میں ڈالنے کا الزام عائد کیا تھا جاسوسی کے الزامات انہیں کئی دہائیوں تک جیل بھیج سکتے تھے۔

بین الاقوامی خبریں سے مزید