آپ آف لائن ہیں
اتوار9؍صفر المظفّر 1442ھ 27؍ستمبر 2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

حکومت کا سرکاری ملازمین کو نجی کاروبار، ذاتی کنسلٹینسی خدمات سے روکنے کا حکم


حکومت نے سرکاری ملازمین کو نجی کاروبار اور ذاتی کنسلٹینسی خدمات سے روکنے کا حکم دیا ہے۔

ذرائع اسٹیبلشمنٹ ڈویژن کے مطابق اس حوالے سے جاری حکم نامے میں کہا گیا کہ خلاف ورزی پر گورنمنٹ سرونٹس رولز کے تحت کارروائی ہوگی۔

ذرائع کا کہنا تھا کہ سرکاری ملازمین کے ذاتی و نجی کاروباری معاملات کا عمل مس کنڈکٹ کے مترادف ہوگا۔

سرکاری ملازمین کو نجی کاروبار و ملازمت یا کنسلٹینسی خدمات کے لیے پیشگی اجازت لینا ہوگی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ کوئی سرکاری ملازم بغیر اجازت اور این او سی نجی کاروبار، خدمات یا ملازمت نہیں کرسکتا۔

ذرائع اسٹیبلشمنٹ ڈویژن کا کہنا تھا کہ حکومت کو کئی سرکاری ملازمین کے نجی کاروبار، ملازمت اور خدمات کی رپورٹس موصول ہوئی ہیں۔

حکم نامے میں کہا گیا کہ وفاقی حکومت کے نوٹس میں آیا ہے کئی سرکاری ملازمین کے کیسز میں قواعد و ضوابط پر عمل نہیں ہو رہا۔

کئی سرکاری ملازمین و افسران کے قواعد و ضوابط کو نظر انداز کرنے کے کیسز کی تحقیقات کر رہے ہیں۔

قومی خبریں سے مزید