| |
Home Page
جمعرات 29 ذوالحج 1438ھ 21 ستمبر 2017ء
June 30, 2017 | 12:00 am
فیصلہ نوازشریف کیخلاف آیا تواکثر’ن‘لیگی رہنما پارٹی چھوڑدینگے،منظوروسان

Todays Print

کراچی (اسٹاف رپورٹر)صوبائی وزیر صنعت و تجارت منظور حسین وسان نے کہا ہے کہ فیصلہ نوازشریف کے خلاف آیا تو ن لیگ کے اکثر رہنما،ق لیگ،پی پی پی اور پی ٹی آئی میں شامل ہوجائیں گے۔سابق جنرل پرویز مشرف اور ن لیگ کے متعلق پیشگوئی کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ پرویز مشرف ڈر کے مارے وطن نہیں آئیں گے۔ایک بیان میں انہوں نے ق لیگ کے متعلق پیشگوئی کرتے ہوئے کہا کہ ق لیگ کے مستقبل کا فیصلہ پاناما سے جڑا ہواہے،ق لیگ کی قیادت چوہدری برادران نہیں پرویز مشرف کریں گے۔ مشرف کی خواہش ہے کہ عمران سے ملکر سیاسی پارٹیوں کو ملاکر تھرڈ فورس بنائی جائے،مگر مشرف اور عمران میں قیادت کرنے پر لڑائی ہے،مشرف دبئی اور لندن گھوم اور وہاں بیٹھ کر اپنے لوگوں کو لیکچر ہی دے سکتے ہیں، یا پھر وہ  ٹی وی ٹاک شو کریں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستانی سیاست میں ان کا کوئی مستقبل نہیں،مشرف چاہتاہے کہ عمران، چوہدری برادران، متحدہ، ف لیگ اور قوم پرست جماعتوں کو آپس میں ملا کر ایک تھرڈفورس بنائی جائے، لیکن ان دونوں میں اختلاف ہوگئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ پرویز مشرف ڈر کے مارے وطن واپس نہیں آئیں گے وہ ادھرہی  رہیں گے۔ انہوں نے کہا کہ متحدہ بھی مشرف کے ساتھ ملکر انتخابات لڑے گی،حالات ایسے ہیں کے آنے والے انتخابات میں کسی بھی  ایک جماعت کو اکثریت نہیں ملے گی،ٹو تھرڈمجارٹی کسی جماعت کو نہیں ملے گی۔انہوں نے مزید کہا کہ آئندہ انتخابات میں دو جماعتیں اکثریت لیں گی جو تیسری جماعت سے ملکر حکومت بنائیں گی، سندھ میں فنکشنل لیگ مکمل طور پرختم ہوچکی ہے۔