| |
Home Page
بدھ 03 ربیع الاوّل 1439ھ 22 نومبر 2017ء
July 17, 2017 | 12:00 am
پشاورکا ایک اور اسکینڈل، خواتین کیساتھ غیر اخلاقی ویڈیوز بنانیوالا پرنسپل گرفتار

Todays Print

پشاور(نمائندہ جنگ)حیات آباد میں خواتین کو ہراساں کرکے غیر اخلاقی ویڈیوز بنانے اور بعدازاں انہیں بلیک میل کرنے والے نجی اسکول کے پرنسپل کو پولیس نے گرفتارکرکے سیکڑوں غیر اخلاقی ویڈیوز جنسی ادویات اورمنشیات برآمد کرلی اور اس کے خلاف 12مقدمات کر لئے ملزم پر اسکول کی بعض طالبات کی مائوں کو بھی بلیک میل کرنے کا الزام ہے ٗگرفتار ملزم کی رہائی کے لئے مختلف محکموں کے اعلی افسروں نے بھی پولیس پر دبائو ڈالنا شروع کردیا ہے پولیس نے ان کی ویڈیو حاصل کرلی ہے رات گئے ملزم کے لواحقین نے پولیس کو شکایت کرنے والے لڑکے کے گھر پر حملہ کرکے ان پر بھی دبائو ڈالنے کی کوشش کی ہے ۔

پشاور پولیس ترجمان کے مطابق گزشتہ روز ایس ایس پی آپریشنز سجاد خان کو اطلاع ملی کہ حیا ت آباد فیز ون میں قائم نجی اسکول کے پرنسپل چھٹی کے بعد اپنی ذاتی گاڑی کو بطور ٹیکسی استعمال کرکے مختلف عورتوں کو سکول میں لاکر بدکاری کرواتا ہے جس کا نوٹس لیتے ہوئے پولیس نے فوری کاروائی کرکے پرنسپل عطاء اللہ مروت  ولد تاج علی سکنہ لکی مروت حال حیات آباد کو گرفتار کرلیا پولیس کے مطابق سکول کی چھان بین کے دوران مختلف کمروں سے جنسی ادویات اوردیگر سامان برآمد کرلیاگیا جبکہ جامہ تلاشی پر ملزم کے قبضے سے دو موبائل فونز ٗ لیپ ٹاپ ٗ میموری کارڈز برآمد کیاگیا جس میں کم عمر لڑکوں ٗ لڑکیوں اور طالبات کے ساتھ غیر اخلاقی حرکات پر مبنی ویڈیوز شامل ہیں پولیس کے مطابق سکول میں ایک کمرے میں خفیہ کیمرے نصب کئے گئے جہاں پرنسپل لڑکوں ٗ لڑکیوں کے ساتھ غیر اخلاقی حرکات کرکے ویڈیوز بناتا تھا اور پھرانہیں بلیک میل کرکے انہیں استعمال کرتا تھا پولیس کے مطابق مقدمہ درج کرکے مزید تفتیش شروع کردی گئی ہے ۔

بتایاجاتاہے کہ پولیس نے خواتین کے بیانات بھی قلمبند کردئیے ہیں  اگلے روز ملزم کی رہائی کے لئے اعلی عہدوں پر تعینات افراد نے تھانے آکر پولیس پر دبائو ڈالنے کی کوشش کی ہے جس پر پولیس نے ان کی ویڈیو بنالی ہے بتایا جاتاہے کہ ملزم کے جاننے والوں نے پولیس کو شکایت کرنے والے لڑکے کے گھر پر بھی حملہ کردیاہے تاہم بعدازں پولیس نے موقع پر پہنچ کر حالات پر قابو پالیا ۔