| |
Home Page
بدھ29؍ربیع الثانی 1439ھ 17 ؍ جنوری2018ء
مبشر علی زیدی
September 14, 2017 | 12:00 am
ضرورتیں…

Zarooraten

’’دس روپے کا سوال ہے بابا!‘‘
فقیر نے کشکول آگے بڑھایا۔
’’معاف کرو۔‘‘
چپراسی بڑبڑایا۔
’’صاحب! بچے کی فیس دینی ہے۔
ہزار دو ہزار روپے سے مدد کر سکتے ہیں؟‘‘
چپراسی نے درخواست کی۔
’’تنخواہ آئے تو یاد دلانا۔
ابھی مہینے کی آخری تاریخیں چل رہی ہیں۔‘‘
صاحب نے سمجھانے کی کوشش کی۔
’’باس! بیٹی کی شادی ہے۔
کمپنی سے دو لاکھ کا لون چاہئے۔‘‘
آپ سفارش کر دیں۔‘‘
صاحب منمنائے۔
’’آج کل کمپنی کرائسس میں ہے۔
چند ماہ بعد دیکھتے ہیں۔‘‘
باس نے ٹال دیا۔
پھر بینک ایگزیکٹو کو فون کیا،
’’میرے پچاس لاکھ کے لون کا کیا بنا؟‘‘