| |
Home Page
ہفتہ 27 ربیع الاوّل 1439ھ 16 دسمبر2017ء
ادارتی نوٹ
September 20, 2017 | 12:00 am
پاکستان سب سے پہلے

Pakistan Sab Se Pehlay

وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے اقوام متحدہ کے جنرل اسمبلی اجلاس میں شرکت کے لئے نیویارک جاتے ہوئے لندن سے روانگی سے قبل جیو نیوز سے گفتگو کے دوران کہا کہ وہ اس نقطہ نظر سے اتفاق کرتے ہیں کہ پہلے ہمارے اپنے گھر کی صفائی کی ضرورت ہے۔ وزیر خارجہ خواجہ آصف نے ایک بیان میں کہا تھا کہ اتھارٹیز کو اپنے گھر کے معاملات پہلے طے کرنے چاہئیں۔ وزیرخارجہ کے ان ریمارکس پر تنقید بھی کی گئی تھی۔ لیکن وزیراعظم نے ان کی تائید کی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ پاکستان نے امریکہ پر واضح کردیا ہے کہ ہم اپنے قومی مفادات کو ہر چیز پر مقدم رکھیں گے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ پاکستان اقوام متحدہ میں دہشت گردی کے خلاف اپنے بھرپور کردار کے بارے میں آگاہ کرے گا، پاکستان نے بہت قربانیاں دی ہیں، اب عالمی برادری دہشت گردی کے خاتمے کے لئے ہماری کاوشوں کو تسلیم کرے۔ وزیراعظم کے اس مختصر جامع بیان سے یہ ظاہر ہوجاتا ہے کہ پاکستان نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں ماضی میں جس استقامت کا مظاہرہ کیا تھا وہ آج بھی اس پر قائم ہے۔یہ امر حیرت انگیز ہے کہ پاکستان نے دہشت گردی کی جنگ میں 70ہزار سے زیادہ جانوں کی قربانی دی، ایک کھرب ڈالر سے زیادہ مالی نقصان اٹھایا، اپنی سرزمین سے تمام دہشت گرد گروہوں کا صفایا کردیا لیکن امریکہ اب بھی کسی نہ کسی بہانے اس سے ڈومور کا مطالبہ کر رہا ہے۔ اس پس منظر میں پاکستان کا یہ موقف درست ہے کہ ہم نے جتنا کرنا تھا کر دیا اب دوسروں کو ڈومور کرنا چاہئے۔ عالمی برادری کو دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کی قربانیوں کا احساس دلانے اور خصوصاً امریکہ کو یہ باور کرانے کے لئے کہ پاکستان اپنے قومی مفادات سے صرف ِنظر نہیں کرے گا ضروری ہے کہ ملک کے تمام ادارے ایک پیج پر ہوں اور پارلیمنٹ فیصلہ سازی میں جرأت مندانہ کردار ادا کرے۔ ملک کی تمام سیاسی پارٹیاں گروہی مفادات سے بالاتر ہوکر حساس قومی مسائل پر یکساں موقف اختیار کریں۔ ادارے اپنی آئینی حدود کے اندر رہیں صرف اسی طریقے سے ملک کو بحرانوں سے محفوظ بنایا جاسکتا ہے۔