| |
Home Page
جمعرات 25 ربیع الاوّل 1439ھ 14 دسمبر2017ء
October 13, 2017 | 12:00 am
کسی کو اپنے اسلام کا ثبوت نہیں دینا، نعرے لگانے کی ضرورت نہیں، ترجمان پاک فوج

Todays Print

کسی کو اپنے اسلام کا ثبوت نہیں دینا، نعرے لگانے کی ضرورت نہیں، ترجمان پاک فوج

کراچی (اسٹاف رپورٹر) پاک فوج کے ترجمان میجر جنرل آصف غفور نے کہا ہے کہ پاک فوج نے مرحلہ وار اپنےعلاقوں سے دہشت گردوں کا خاتمہ کیا آج پاکستان میں دہشت گردوں کی کوئی پناہ گاہ نہیں ، مجھے کسی کو اپنے اسلام پر ہونے کا ثبوت نہیں دینا ، یہ میرا اور اللہ کا معاملہ ہے ، مسلمان ہونے کیلئے نعرے لگانے کی ضرورت نہیں عمل سے ثابت کریں ، طلباء منفی چیزوں پر دھیان مت دیں والدین کے خواب پورے کریں ، ہر بنیاد پرست دہشت گرد نہیں اور ہر دہشت گرد بنیاد پرست نہیں ہوتا ، مغرب اور بھارت بھی بنیاد پرست ہیں۔ ان خیالات کا اظہار ڈی جی آئی ایس پی آر نے جمعرات کو جامعہ کراچی کے آرٹس آڈیٹوریم میں اساتذہ اور طلبا سے خطاب کے دوران کیا۔ اس موقع پر وائس چانسلر ڈاکٹر محمد اجمل خان و دیگر اساتذہ کے علاوہ طلبہ وطالبات کی بڑی تعداد موجود تھی ۔

ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور نے کہا کہ میری خوش قسمتی ہے کہ میں جامعہ کراچی آیا ہوں یہاں آکر لگا کہ خواتین کی یونیورسٹی آیا ہوں تاہم میں نے جامعہ میں طالبات کا تناسب زیادہ ہونے کی وجہ بھی وائس چانسلر سے پوچھی۔ انہوں نے اپنے خطاب میں ملکی صورتحال اور دہشت گردی سے متعلق کہا کہ ہم نے آپریشن ضرب عضب کامیابی سے مکمل کیا دہشت گردوں کی پناہ گاہیں ختم کردی ہیں اور اب ان کا کوئی ٹھکانہ موجود نہیں ۔ ڈی جی آئی ایس پی آر نے واضح کرتے ہوئے کہا کہ بھارتی جاسوس کلبھوشن کے معاملے پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا، ایبٹ آباد آپریشن پر فوج ناکام نہیں ہوئی ہے۔ انہوں نے طلبہ پر زور دیا کہ وہ منفی چیزوں پر توجہ دینے کے بجائے پڑھائی پر توجہ دیں اور والدین کے خواب پورے کریں، حالات پہلے سے بہتر ہورہے ہیں پہلے روز دھماکے ہوتے تھے لیکن اب ایسا نہیںہوتا ہے، لیکن دشمن کہیں بھی ہوگا اسے گھس کر ماریں گے۔انہوں نے کہا کہ سب سے پہلے ہم بنیاد پرستی کے موضوع پر بات کریں گے بنیاد پرستی کی مختلف اقسام ہوتی ہیں میں بھی بنیاد پرست ہوں مغربی ممالک اور بھارتی بھی بنیاد پرست ہیں لیکن ہر بنیاد پرست دہشت گرد نہیں اور ہر دہشت گرد بنیاد پرست نہیں ہوتا۔

انہوں نے کہا کہ اگر میں چاہوں کہ سب دنیا کو میری نظر سے دیکھیں تو میں بنیاد پرست نہیں انتہا پسند کہلاؤں گا،جب میں دوسروں کو اپنے نظریات ماننے پر مجبور کروں تو تشدد پسند یا دہشت گرد کہلاؤں گا۔پاکستان اللہ کا تخلیق کردہ سب سے خوبصورت ملک ہے، جغرافیائی لحاظ سے بھی پاکستان کی اہمیت سب سے زیادہ ہے، کسی بھی ملک کو تباہ کرنے کے لیے اس کی سیکورٹی فورسز کو نشانہ بنایا جاتا ہے، پاکستان اور جاپان میں سب سے پہلے بوئنگ طیارے آئے تھے، مجھے کسی کو پروف نہیں کرنا کے میں مسلم ہوں ، یہ میرا اور اللہ کا معاملہ ہے، ہم اسلام کے اصولوں پر عمل کریں تو دنیا ہمیں اسلامی ملک پہچانے گی، مسلمان ہونے کے لیے نعرہ لگانے کی ضرورت نہیں عمل سے ثابت کریں ،اللہ نے دنیا کو ہر نعمت سے نوازا ہے۔ہر موسم ہر پھل دریا پہاڑ صحرا سب اس ملک میں ہے، سویت یونین جب افغانسان آیا تو کہا گیا اس سے اسلام کو خطرہ ہے ،امریکا کی مدد سے سوویت کو افغانستان سے نکالا ، نائن الیون کے بعد امریکا نے افغانستان پر حملہ کیا، امریکا سے لڑنے والوں کو وہاں پناہ نہیں ملی تو پاکستان آگئے، ہم نے مرحلہ وار اپنے علاقوں سے دہشتگردوں کا خاتمہ کیا ہے، آج پاکستان میں دہشت گردوں کی کوئی پناہ گاہ موجود نہیں۔

تقریب کے اختتام پر طلبہ کی بڑی تعداد نے ڈی جی آئی ایس پی آر کے ساتھ سیلفیاں بھی بنوائیں۔