آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
تازہ ترین
آج کا اخبار
کالمز
راشد سعید
راشد سعید | 01 فروری ، 2019

وادی کوئٹہ کی ’سلیپنگ بیوٹی‘ نے سفید پیرہن اوڑھ لیا


وادی کوئٹہ سمیت بلوچستان کے پہاڑی علاقوں کا ہر منظر حسین اور قابل دید ہے، صوبے کے طول و عرض میں پھیلے ان سرمئی اور سنگلاخ پہاڑوں نے برف کی چادر اوڑھ لی ہے۔

ایسے میں کوئٹہ کے نواح میں واقع قدرت کی شاہکار سلیپنگ بیوٹی کے نام سے مشہور پہاڑی نے بھی برف کا سفید پیرہن اوڑھ لیا ہے۔

وادی کوئٹہ اور بلوچستان کے شمال مغربی علاقوں میں بارش کے علاوہ برف باری کا منگل کی رات شروع ہونے والا سلسلہ گزشتہ روز تک جاری رہا، اس دوران آسمان سے برف روئی کےگالوں کی طرح گرتی رہی اور سفید چاندنی ہر سو بکھرتی چلی گئی۔

برف باری کے بعد کوئٹہ کے نواح اور زیارت، مسلم باغ، کان مہتر زئی، مستونگ، قلات، موسیٰ خیل، پشین، خانو زئی، لورا لائی سمیت دیگر پہاڑی علاقوں میں ہر منظر سفید ہے جہاں دور دور تک برف ہی برف بچھی دکھائی دے رہی ہے۔

کوئٹہ کے نواحی پہاڑی سلسلے میں قدرتی طور پر بنی سلیپنگ بیوٹی یعنی سوئی ہوئی حسینہ کےنام سے مشہور پہاڑی نے بھی برف کا پیرہن اوڑھ لیا ہے۔

برف باری کے بعد برف سے ڈھکے یہ پہاڑی علاقے ہر کسی کو دعوتِ نظارہ دیتے نظر آتے ہیں، یہی نہیں کوئٹہ اور دیگر علاقوں کے افق پر چھائے کہیں سیاہ تو کہیں سفید اور کہیں سرمئی بادل بھی خوبصورت منظر پیش کر رہے ہیں۔

اگرچہ بارش اور برف باری کے بعد سردی کی شدت میں قدرے اضافہ ہو گیا ہے مگر شدید خشک سالی کے بعد ابر آلود موسم نے شہریوں کی خوشی دوبالا کر دی ہے۔

دوسری جانب محکمہ موسمیات کی جانب سے آئندہ منگل کے روز سے بارش کے ایک اور نئے سسٹم کے تحت کوئٹہ، پشین، قلات، ہرنائی، ژوب، شیرانی، زیارت، قلعہ سیف اللہ، پشین، لورالائی، قلات، خضدار اور لسبیلہ سمیت صوبے کے بیشتر شمال مغربی اضلاع میں بارش اور پہاڑی علاقوں میں برف باری کا امکان ظاہر کیا گیا ہے۔