ملازمت قبول کرنے سے پہلے چند سوالات

August 03, 2018
 

ملازمت حاصل کرتے ہی کیرئیر کو پروان چڑھانے اور زندگی کی گاڑی کو آگے بڑھانے کے لیے آپ کے اندر ایک نئی توانائی آجاتی ہے۔ لیکن کیاآپ نےملازمت کے لیے ہامی بھر نے سے پہلے ادارے سے کچھ سوالات پوچھےجونیا عہدہ نبھانے سے پہلے پوچھے جانے چاہیے تھے؟ اگر نہیںتو ہم آپ کی مدد کرتے ہیں اور ان سوالات کے جواب کے بعد آپ اپنی نئی کمپنی میںبااعتماد طریقے سے قدم رکھ سکیںگی۔

صنفی امتیاز کے بارے میں آپ کی کیا پالیسی ہے؟

اس کا سامنا شاید سبھی کو کرنا پڑسکتاہےکیونکہ ہم ایک آئیڈیل دنیا میں نہیںرہتے ۔ صنفی امتیاز چاہے نسلی ہو یا جنسی، اپنی ہی صنف سے نفرت ہویا مخالف صنف سے،یاپھر اس کی وجہ قابلیت ہو، اپنا وجود رکھتاہے۔ بہت سی کمپنیاں اس پالیسی کے لحاظ سے اچھی ہوتی ہیں، لحاظہ اس حوالے سے معلوم کرنا ضروری ہوتاہے۔

کمپنی کی اقدار کیا ہیں ؟

یہ جاننا ضروری ہے کہ آپ کس کیلئے کام کرنے جار ہی ہیں۔ اگر یہ اقدار آپ کی سوچ اور ضمیر کےمطابق نہیںہیںتو آپ کو دورانِ ملازمت پریشانی کا سامنا کرنا پڑ سکتاہےاور آپ اپنی توقعات کے برخلاف بہت جلد دوسری ملازمت ڈھونڈ رہی ہوںگی۔

جاب سیکیورٹی ہے؟

اگر کمپنی میںملازموں کی آمد جامد بہت زیادہ ہے تو بھی الارمنگ ہوسکتاہے کیونکہ جاب سیکوریٹی کے خدشات کے تحت آپ ذہنی سکون نہ ہونے کے باعث اپنی ذمہ داریوںپر دھیان نہیںدے سکیں گی ۔ اسی لیے یہ پہلو بھی مد نظر رکھنا چاہیے۔

تنخواہ میں اضافہ متوقع ہے؟

اگر آپ کے پاس مخصوص قابلیت ہے تو آپ اپنی تنخواہ میںاضافے کے حوالے سے گفت و شنید کرسکتی ہیں، خاص طور پر جب کمپنی میں تربیت کے مواقع موجود نہ ہوں۔ اگر آپ پیشکش کردہ تنخواہ قبول کربھی لیتی ہیں تو یہ یقین دہانی حاصل کرلیں کہ کتنی مدت بعد اس میں اضافہ متوقع ہوگا کیونکہ آپ جو معاوضہ لے رہیہیںاس سے آپ کو گھر ، گاڑی اور زندگی کو چلانا ہے۔

کیا ملازمت میں ترقی کے مواقع ہیں؟

آپ کا جوش وجذبہ اس وقت تک برقرار رہے گا جب تک آپ کو یقین رہے گا کہ آپ ترقی کی مزید منازل طے کرسکتی ہیں۔اگر آپ ایک ہی قسم کی ذمہ داری نبھاتی رہیں اور دوسرے آپ سے آگے نکلتے رہیں تو پھر آپ اپنی جاب کو انجوائے کرنا بھو ل جائیںگی۔

کن چیلنجز کاسامنا کرناپڑے گا؟

کوئی بھی جاب قبول کرنے سےپہلے یہ سوال لازمی ہےلیکن یہ سوال آپ کو خود سے بھی کرنا چاہیے کہ کیا آپ چیلنجز قبول کرنے کیلئے تیار ہیں، اگر نہیںتو پھر آپ کو نظر ثانی کی ضرورت ہے۔

کیا اس ملازمت میںمیٹرنٹی چھٹیاں ملیں گی؟

اگر آپ شادی شدہ ہیں اور فیملی کی شروعات کر چکی ہیںتو میٹرنٹی کی چھٹیوں سے متعلق سوال لازمی کریںکیونکہ اکثر کمپنیا ںمیٹرنٹی چھٹیوں کی مع تنخواہ اجازت دیتی ہیں۔ اگر کمپنی کی پالیسی نہیںہے تو بہرحال آپ کی تنخواہ اتنی ہونی چاہیے کہ آپ اس مدت کوبغیر تنخواہ کے گزارسکیں۔

آخری ملازم نے استعفیٰ کیوںدیا؟

آپ کی تعیناتی جس کی جگہ کی گئی ہے، اگر اس نے زیادہ مشاہرے کی بناء پر ملازمت چھوڑی ہے تو یہ اچھی بات ہے، لیکن اگر وہ دوران ِملازمت بے بہا ذمہ داریوں اور ناروا سلو ک کی وجہ سے نوکری چھوڑ کر گئی ہے تو یہ کوئی اچھی علامت نہیںہے۔

آپ ملازمت کتنی کامیابی سے کر پائیںگی؟

اپنی ذمہ داریوںکو اچھی طرح نبھانے کیلئے یہ سوال خود سے ضرور پوچھیں کہ آپ کتنی کامیابی سے ملازمت کر پائیںگی، خاص کر اگر یہ آپ کی پہلی جاب ہے۔ اپنے ایمپلائر کی توقعات کو جاننا ضروری ہے نہ کہ آپ صرف اندازوںسے کام چلاتی رہیں۔

کیا کمپنی کوآپ سے خدشات ہو سکتے ہیں؟

اگر یہ سوال آپ براہ راست نہیںپوچھتیںتو ہو سکتا ہے کہ آپ کے نئے ایمپلائر کو آپ سے تحفظا ت ہوں۔ اگر ایمپلائر اور ایمپلائز ایک دوسرے کے تحفظات دور نہیںکریں گے اورآپس کے فاصلے کو رہنے دیں گے تو کام کا عمدہ ماحول میسر نہیںہوگا۔

کیادورانِ ملازمت تربیت دی جاتی ہے؟

نئی ملازمت میں اکثر و بیشتر تربیتی عمل سے گزرنا پڑتاہے ۔ یہ اس لئے بھی اہم ہے کہ اس سے آپ کو اپنی جاب ہینڈل کرنے میںمدد ملتی ہے ۔ بس یہ جاننا ضرور ی ہے کہ یہ کتنی مدت کی ہوگی اور اس میںکن عوامل کی تربیت دی جائے گی۔ یہیں سے آپ کو کمپنی کااور کمپنی کو آپ کا پہلا تاثر ملے گا۔

ایک دن میںکتنا کام کرنا پڑے گا؟

یہ بھی جاننا ضرور ی ہے کہ آپ کے اوقات کار کیاہیںتاکہ آپ اپنے کام کے ساتھ انصاف کرسکیں اور گھریلوزندگی کے ساتھ متوازن رہ سکیں۔

تنخواہ کے علاوہ دیگر فوائد کون سے ہیں؟

تنخواہ کے علاوہ دیگر فوائد کے بارے میںجاننا بھی بہت اہم ہے۔ اس بارے میں معلوم کریں کہ کمپنی میڈیکل انشورنس کی سہولت دیتی ہے یا نہیں اور اگر دیتی ہے تو اس کی حد کیا ہے؟ اس کے علاوہ سالانہ چھٹیاں، قابل ادا ئیگی چھٹیاں اور پک اینڈ ڈراپ کی سہولت موجود ہے یا نہیں؟

یہ تو تھے چند سوالات ، اس کے علاوہ بھی آپ کے ذہن میںجو سوالات در آئیں، ان کا جواب حاصل کرنے کی کوشش کریں، امید ہے کہ یہ کاوش آپ کے کام آئے گی۔


مکمل خبر پڑھیں