ایک شاعر، ایک شعر: رنجش ہی سہی، دل کو دُکھانے کے لیے آ

August 29, 2018
 

احمد فراز

رنجش ہی سہی، دل کو دُکھانے کے لیے آ

آ، پھر سے مجھے چھوڑ کے جانے کے لیے آ

(عبدالصبور خان)


مکمل خبر پڑھیں