ماضی کی لیجنڈری اداکارہ زیبا

September 10, 2018
 

Your browser doesnt support HTML5 video.

پاکستانی فلموں کے سنہری دور کی ممتاز اداکارہ ، خوبصورتی میں بے مثال اور جن کی شخصیت بھی ہےکمال وہ ہیں ’’زیبا بیگم‘‘ جو آج اپنی 73 ویں سالگرہ منا رہی ہیں۔

اپنے وقت کی لیجنڈری اداکارہ زیبا 10 ستمبر1945 کوبھارت کے شہرانبالہ میں پیدا ہوئیں۔انہوں نے اپنے فلمی سفر کا آغاز 1962 میں فلم ’’چراغ جلتا رہا‘‘ سے کیا ۔ فلم ’چراغ جلتا رہے‘نے زیبا کو فلمی دنیا کا ستارا بنا دیا ۔

زیبا نے اپنے کیریئر میں 90سے زائد فلموں میں کام کیا ۔ان کی سپر ہٹ فلموں میں’ ارمان ، ہیرا اور پتھر ، توبہ ، باجی ، محبت ، انسان اور آدمی ، جب جب پھول کھلے ، محبت زندگی ہے اور پھول میرے گلشن ‘ شامل ہیں ۔

اداکارہ زیبا اور محمد علی کی فلم ’چراغ جلتا رہا ‘کو اس حوالے سے بھی تاریخ میں خاص اہمیت حاصل ہے کہ اس کی افتتاحی تقریب کے موقع پر مادر ملت محترمہ فاطمہ جناح کو بھی مدعو کیا گیا تھا ۔

ان کی فلمی جوڑی وحید مراد اور کمال کے ساتھ بےحد مقبول ہوئی جبکہ ان کی اصل زندگی کی جوڑی محمد علی کے ساتھ جمی۔زیبا کو محمد علی کی سچ بولنے کی عادت بہت متاثر کرتی تھی۔

1966 میں جب وہ ایک ساتھ اقبال یوسف کی فلم '’تم ملے پیار ملاـ‘کر رہے تھےتو ان کے درمیان محبت کا رشتہ بنا۔ ان کی شادی فلم اسٹار آزاد کے گھر میں 29 ستمبر 1966 کو کراچی میں ہوئی ۔

زیبا کی پہلی شادی اداکار سدھیر سے 1964 میں ہوئی تھی مگر یہ شادی زیادہ نہیں چل سکی اور دو سال تک ساتھ رہنے کے بعد دونوں میں علیحدگی ہوگئی ۔

اپنے شوہر اداکار محمد علی کے ہمراہ 50 سے زائد فلموں میں کام کرکے انہوں نے ایک ریکارڈ قائم کیا ۔ زیبا کو چار نگار ایوارڈ اور الیاس رشیدی گولڈ میڈل کے علاوہ دیگر اعزازات سے بھی نوازا گیاہے۔

زیبا کو فلم انڈسٹری میں انتہائی عزت و احترام کی نظر سے دیکھا جاتا ہے اور فلم انڈسٹری سے تعلق رکھنے والے انہیں بھابھی کے لقب سے پکارتے ہیں ۔


مکمل خبر پڑھیں