آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
منگل3؍ربیع الثانی 1440ھ11؍دسمبر 2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

نوبیل انعام یافتہ ملالہ یوسف زئی نے امریکا سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ پناہ گزینوں کا آنسو گیس سے استقبال نہ کیاجائے،  وہ اس رویے کے ہرگز حقدار نہیں ہیں۔ 

ہارورڈ یونیورسٹی کی جانب سےایوارڈ وصول کرنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے نوبیل انعام یافتہ ملالہ یوسف زئی نے کہا کہ یہ تصور نہیں کیا جانا چاہیے کہ پناہ گزیں بننے میں خود ان لوگوں کا ہی قصورہے، پناہ گزینوں کا استقبال آنسو گیس سے نہ کریں کیونکہ وہ اس رویے کے ہرگز حقدار نہیں۔

ملالہ یوسف زئی نے کہا کہ انہوں نے اپنی کہانی دنیا کو سنائی ہے، دنیا یہ یاد رکھے کہ ہم بھی ایک پرامن ملک میں رہتے تھے۔ طالبان سے پہلے سوات شورش زدہ علاقہ ہرگز نہیں تھا۔ وادی سوات کو اپنے قدرتی حسن کی وجہ سے سیاحتی مقام کی حیثیت سے بین الاقوامی شہرت حاصل تھی۔

شام بھی پرامن تھا اور وہ تمام ممالک بھی جہاں آج جنگ کی وجہ سے دربدر ہونے والے لوگ ہجرت کرنے پر مجبور ہیں،یہ ممالک بھی امریکا، برطانیہ، فرانس یا جرمنی جیسے ہی پر امن تھے۔ ہم پناہ گزینوں کو ان کے حالات کا ذمہ دار نہیں ٹہرا سکتے۔ یہ ان کا قصور نہیں کہ آج وہ پناہ گزین ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہمیں احساس کرنا ہوگا کہ اگر ہم ان حالات میں ہوں تو ہم دوسروں سے کیسے رویے کہ توقع رکھیں گے، امید ہے کہ کوئی ان حالات کو نہ پہنچے۔ ہمیں اپنے بھائیوں بہنوں کی طرح ان کا استقبال کرنا چاہئے۔

ہمیں انسان بن کر دردمندی سے سوچنا اور سمجھنا چاہئے۔

واضح رہے ہارورڈ یونیورسٹی کی جانب سےمنعقد کردہ تقریب میں ملالہ یوسف زئی کو کینیڈی اسکول سینٹر فار پبلک لیڈرشپ ایوارڈ دیاگیاہے، جس کے ساتھ ہی سرٹیفیکٹ اور ایک لاکھ پچیس ہزار ڈالربھی شامل ہیں۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں