آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
جمعہ20؍محرم الحرام 1441ھ 20؍ستمبر 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

پولیس اہلکاروں کی زیادتی کا نشانہ بننے والی لڑکی کاعلاقہ مجسٹریٹ کو بیان قلمبند انصاف فراہم کرنے کا مطالبہ

راولپنڈی (نمائندہ جنگ) چار روز قبل پولیس ملازمین کی زیادتی کا نشانہ بننے والی لڑکی نے گزشتہ روز علاقہ مجسٹریٹ کی عدالت میں پیش ہوکر اپنا بیان قلمبند کروا دیا، بائیس سالہ (ر) کو پولیس کے کڑے پہرے میں گزشتہ روز علاقہ مجسٹریٹ محمد ارشد کی عدالت میں پیش کیا گیا جہاں متاثرہ لڑکی نے دفعہ 164کے تحت اپنے بیان میں بتایا کہ پندرہ اور سولہ مئی کی درمیانی شب اپنے دوست عمیر اعظم کیانی کے ساتھ فیز آٹھ میں سحری کیلئے گئی ہوئی تھی کہ وہاں ایک گاڑی میں سوار چار افراد نے ہمیں روکا ، مجھے گاڑی سے اتار کر اپنے ساتھ لے گئے اور گھنٹوں سرکاری گاڑی میں زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد کمرشل مارکیٹ میں واقع میرے ہوسٹل کے باہر پھینک کر چلے گئے ،جاتے وقت میرے پرس سے تیس ہزار روپے اور انگوٹھی بھی چھین لی۔انہوں نے مجھے اپنا نمبر دیتے ہوئے یہ بھی کہا کہ آئندہ بھی ہم سے رابطہ رکھنا اگر کسی کو خبر دی تو اچھا نہ ہوگا۔ میں نے اگلے روز سی پی او آفس آکر ساری روداد بیان کی۔ متاثرہ لڑکی نے روتے ہوئے عدالت سے انصاف کا مطالبہ کیا، لڑکی کا بیان قلمبند کروانے والے ایس ایچ او روات محمد عظیم نے بتایا کہ کہ چاروں ملزمان کو گرفتار کر کے پانچ روز کا ریمانڈ حاصل کر رکھا ہے ضرورت پڑنے پر مزید ریمانڈ بھی لے سکتے ہیں،سی پی او کے حکم متاثرہ لڑکی کو بھرپور

سیکیورٹی بھی فراہم کی جا رہی ہے۔

اسلام آباد سے مزید