آپ آف لائن ہیں
ہفتہ13؍ربیع الاوّل 1442ھ31؍اکتوبر2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

آرمینیا کا گانجا پر حملہ، 12 افراد جاں بحق، 40 زخمی، آذر بائیجان کا بھرپور جواب دینے کا اعلان

باکو(اے ایف پی/جنگ نیوز)آذر بائیجان اور آرمینیا کے درمیان جنگ بندی کیلئے کی گئی تمام کوششیں بے سود ثابت ہوئیں اور ایک بار پھر آرمینیا نے آذر بائیجان کے شہر گانجا پر حملہ کردیا، شدید گولہ باری میں 12 افراد جاں بحق اور40 سے زائد زخمی ہوگئے ،دوسری طرف پاکستان کے سفیر بلال حئی نے متاثرہ گانجا شہر کادورہ کیااور نقصانات کا جائزہ لیا، بلال حئی نے کہا پاکستان معصوم شہریوں پر حملے کی سخت مذمت کرتا ہے، شہری آبادی پر حملے کسی صورت قابل قبول نہیں۔ادھرآذربائیجان نے آرمینیا کے اس حملے کابھرپورجواب دینے کا اعلان کیا ہے۔اے ایف پی کے مطابق آذربائیجان کے شہر گانجا میں میزائل حملے میں کئی مکانات تباہ ہوگئے جس کے نتیجے میں 12 افرادجاں بحق اور 40 سے زائد زخمی ہوگئے۔اے ایف پی کی رپورٹ کے مطابق علی الصبح ہونے والے اس حملے میں کے ایک اور حملہ گانجا کے ایک علیحدہ حصے پر اور تیسرا قریبی اسٹریٹجک شہر منگیسیویر میں ہوا۔یہ حملہ ایسے وقت میں سامنے آیا جب چند گھنٹوں قبل ہی آذربائیجان کی افواج نے آرمینیا کے علیحدگی پسندوں کے دارالحکومت اسٹیپناکرٹ پر گولہ باری کی تھی۔علاقائی قوت روس اور ترکی کے اس لڑائی میں شامل ہونے کے بعد سے عیسائی اکثریتی آرمینیا اور مسلمان اکثریتی آذربائیجان کے درمیان کشیدگی کو کم کرنے کی

بین الاقوامی کوششوں کو حملوں نے بظاہر نقصان پہنچایا ہے۔گانجا میں اے ایف پی کی ایک ٹیم نے دیکھا کہ حملے سے کئی مکانات ملبے کے ڈھیر میں بدل گئے اور آس پاس کی گلیوں میں عمارتوں کی چھتیں گرگئیں۔لوگ خوفزدہ اور آنسوؤں کے ساتھ بھاگے جن کی چپلوں پر سیاہ گرد جمی ہوئی تھی اور چند نے باتھ روب اور پاجامے پہنے تھے۔یہ حملہ اس شہر کے ایک اور رہائشی حصے پر ہونے والے حملے کے صرف چھ روز بعد سامنے آیا جس میں 10 شہری ہلاک اور متعدد افراد زخمی ہوئے تھی۔تازہ ترین حملے کے مقام پر امدادی رضاکار زندہ بچ جانے والے افراد کی تلاش میں کھوج لگانے والے کتوں کا استعمال کر رہے تھے۔65 سالہ ربابہ ظفروو نے اپنے تباہ شدہ مکان کے باہر کھڑے ہوکر کہا کہ ʼہم سو رہے تھے، بچے ٹی وی دیکھ رہے تھے۔ان کا کہنا تھا کہ ʼیہاں تمام گھر تباہ ہوچکے ہیں، کئی لوگ ملبے تلے دبے ہیں،جن میں سے بعض ہلاک اور چند زخمی ہیں۔آذربائیجان کے صدر کے معاون حکمت حاجیو نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر بیان جاری کرتے ہوئے کہا کہ ابتدائی معلومات کے مطابق 20 گھر تباہ ہوئے ہیں۔

اہم خبریں سے مزید