• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

جنوبی افریقا میں نئے ویریئنٹ کے بعد امریکا میں خدشات


جنوبی افریقا میں عالمی وباء کورونا کی نئی قسم سامنے آنے کے بعد امریکا میں معاشی خدشات سامنے آرہے ہیں، ڈاؤ جونز میں ڈھائی فی صد تک گراوٹ دیکھی گئی ہے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق امریکی خام تیل کی قیمت 10 فی صد کم ہو گئی، امریکی خام تیل کی قیمت 7.47 ڈالر فی بیرل کمی کے بعد 69.51 ڈالر فی بیرل ہو گئی ہے۔

دوسری جانب عالمی ادارہ صحت نے جنوبی افریقا سے سامنے آنے والی نئی قسم کو ’اومی کرون‘ کا نام دیا ہے۔

ماہرین کے مطابق پریشانی کی بات یہ ہے کہ نئی قسم میں مجموعی طور پر 50 جینیاتی تبدیلیاں دیکھی گئی ہیں جبکہ اس کی نسبت کچھ عرصہ قبل دنیا کو اپنی لپیٹ میں لینے والی کورونا کی ڈیلٹا قسم میں صرف 2 جینیاتی تبدیلیاں پائی گئی تھیں۔

برطانوی طبی ماہرین کے مطابق بھی کورونا کی یہ قسم اب تک سامنے آنے والی تمام اقسام میں سب سے زیادہ خطرناک ہے۔

رپورٹس کے مطابق خطرناک وائرس کےکیسز کی جنوبی افریقا، یورپ اور اسرائیل میں تصدیق ہوچکی ہے۔ وائرس کا مزید پھیلاؤ روکنےکے لیے عالمی سطح پر ہنگامی اقدامات کا سلسلہ جاری ہے۔

برطانیہ، امریکا، کینیڈا، فرانس، جرمنی، اٹلی، نیدرلینڈز، آسٹریا اور یورپی یونین نے افریقی ممالک پر سفری پابندیاں لگادیں جبکہ سعودی عرب، متحدہ عرب امارات، بحرین اور مراکش نے بھی سفری پابندیاں عائد کر دیں۔

ورلڈ ٹریڈ آرگنائزیشن کی آئندہ ہفتے جنیوا میں ہونے والی کانفرنس ملتوی کردی گئی ہےاس کے علاوہ جنوبی افریقا میں 5 دسمبر سے ہونے والا جونیئر ویمن ہاکی ورلڈ کپ روک دیا گیا ہے۔

بین الاقوامی خبریں سے مزید