آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
جمعہ13؍ شعبان المعظم 1440 ھ19؍اپریل 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

پارلیمنٹ ڈائری:ارکان اُکتاہٹ کا شکار،اجلاس جاری رکھنا دُشوار

اسلام آباد (محمد صالح ظافر، خصوصی تجزیہ نگار) قومی اسمبلی کے فاضل ارکان رواں اجلاس کے پانچویں دن میں اس قدر اُکتاہٹ کا شکار ہوگئے کہ اسپیکر کیلئے اجلاس کا جاری رکھنا دُشوار ہوگیا۔ جمعتہ المبارک کو اجلاس مختصر دورانیے پر مشتمل ہوتا ہے اس کے باوجود ارکان کی عدم موجودگی حیران کن تھی پورے دن کے اجلاس میں کسی ایک موقع پر بھی کورم کے لئے مطلوبہ تعداد میں ارکان ایوان میں موجود نہیں تھے۔ وفاقی وزراء غیرحاضر رہنے میں ارکان سے بھی بازی لے گئے۔ اس طرح ایوان اُجڑے دل کا منظر پیش کرتا رہا۔ اجلاس ملتوی ہونے سے قبل قائد حزب اختلاف شہباز شریف نے ایک مرتبہ پھر مہمند ڈیم کی تعمیر میں ٹھیکے کے حوالے سے قواعد و ضوابط کی سنگین خلاف ورزیوں کی نشاندہی کی اور یاد دلایا کہ اس میں اکیلے بولی دینے والے ٹھیکیدار کو تعمیراتی کام دینا غلط ہے اگر ایسا کرنا ناگزیر ہے تو اس کے لئے بھی پیمانے مقرر ہیں جن کی پاسداری نہیں کی گئی۔ شہباز شریف نے بتایا کہ پاکستان مسلم لیگ نون اپنے دور میں تعمیر و ترقی کے منصوبوں میں سب سے کم

بولی دینے والے ٹھیکیداروں سے بھی ان منصوبوں کی لاگت میں تخفیف کراتی ہے انہوں نے زور دے کر مطالبہ کیا کہ مہمند ڈیم کی تعمیر کا ٹھیکہ دینے کے معاملے کی مکمل چھان بین کیلئے قومی اسمبلی کی کمیٹی تشکیل دی جائے۔ متحدہ مجلس عمل کےرکن مولانا عبدالاکبر چترالی نے اس وقت ایوان سے تنہا واک آئوٹ کر دیا جب انہیں اپنا نکتہ بیان کرنے کا موقعہ نہیں مل رہا تھا وہ یہ کہتے ہوئے ایوان سے باہر نکل گئے کہ یہ مخصوص نشستوں پر آئی خواتین کا ایوان ہے اس پر وہاں موجود مٹھی بھر ارکان قہقہے لگانے پر مجبور ہوگئے۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں