آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
بدھ 18؍محرم الحرام 1441ھ 18؍ستمبر 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر کی 24 گھنٹے میں دوسری بار طلبی

پاکستان نے بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر کو 24 گھنٹے میں دوسری بار دفترِ خارجہ طلب کر لیا


پاکستان نے بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر گورَو اہلو والیا کو 24 گھنٹے میں دوسری بار وزارت ِخارجہ طلب کر لیا۔

دفترِ خارجہ کے ڈی جی ساؤتھ ایشیاء ڈاکٹر محمد فیصل نے بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر گورَو اہلووالیا کو طلب کیا اور ان سے ایل او سی پر بھارتی فوج کی سیز فائر کی خلاف ورزیوں کی مذمت کی۔

بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر سے احتجاج کرتے ہوئے دفتر خارجہ نے کہا ہے کہ بھارتی فوج نے 6 ستمبر کو کھوئی رٹہ سیکٹر میں یکجہتیٔ کشمیر ریلیوں میں شہریوں کو دانستہ نشانہ بنایا، بھارتی فوج کی فائرنگ سے 4 پاکستانی شہری شدید زخمی ہوئے۔

دفترِ خارجہ نے کہا ہے کہ بھارتی فوج ایل او سی اور ورکنگ باؤنڈری پر شہری آبادی کو مسلسل نشانہ بنا رہی ہے، بھارتی فوج بھاری اور خود کار ہتھیاروں سے شہری آبادی کو نشانہ بناتی ہے۔

دفترِ خارجہ کے مطابق بھارتی فوج کی جانب سے 2017ء سے سیز فائر کی خلاف ورزیوں میں تیزی آئی ہے، شہری آبادیوں کو نشانہ بنانا افسوسناک اور عالمی انسانی حقوق و قوانین کی خلاف ورزی ہے۔

دفترِ خارجہ کی جانب سے یہ بھی کہا گیا ہے کہ بھارت کی جانب سے سیز فائر کی خلاف ورزیاں علاقائی امن و سلامتی کے لیے خطرہ ہیں۔

ڈی جی ساؤتھ ایشیاء ڈاکٹر فیصل نے بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر سے مطالبہ کیا کہ بھارت 2003ء کے سیز فائر معاہدے کا احترام کرے اور سیز فائر کی خلاف ورزیوں کے واقعات کی تحقیقات کرے۔

ترجمان دفتر خارجہ نے مزید مطالبہ کیا کہ بھارت اپنی فوج کو سیز فائر کی خلاف ورزیوں سے باز رہنے کی ہدایت کرے، ایل او سی اور ورکنگ باؤنڈری پر امن کے لیے سیز فائر پر من و عن عمل کیا جائے۔

ترجمان دفتر خارجہ نے یہ بھی مطالبہ کیا کہ بھارت سلامتی کونسل کی قرار دادوں کے مطابق یو این مبصر مشن کو کردار ادا کرنے دے۔

قومی خبریں سے مزید