آپ آف لائن ہیں
پیر6؍رمضان المبارک 1442ھ 19؍اپریل2021ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

یاسر حسین اور نوشین شاہ کے درمیان بن بلائے مہمان کا تنازع شدت اختیار کرگیا

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) شادی کی دعوت اور بن بلائے مہمان کے معاملے پر اداکار یاسر حسین اور اداکارہ نوشین شاہ کا تنازع شدت اختیار کرگیا۔نوشین شاہ کا رد عمل آنے کے بعد یاسر حسین نے انسٹاگرام پر کہا کہ ’اگر سچ بولنے کیلئے میں غلط ہوں تو اسے پوچھنے والے شو بھی غلط ہیں، دکھانے والے ٹی وی چینل بھی غلط ہیں اور عوام کو مصالحہ لگا کے بتانے والے بلاگرز کے پیجز بھی غلط ہیں، اور وہ لوگ بھی جو یہ سب پڑھ کے مزہ لیتے اور برا بھلا کہتے ہیں غلط ہیں۔ پورا سسٹم غلط ہے میں اکیلا نہیں، ریٹنگ کیلئے کیے جانے والے اس بیہودہ ریپڈ فائر کا سلسلہ بند ہونا چاہیے۔ ‘انہوں نے نوشین شاہ کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ ’’رہی بات سینئر اداکارہ نوشین کی تو میں نے 100 فیصد سچ کہا کہ ’کچھ لوگ زبردستی آئے‘ ۔ اگر خاموشی سے درگزر کا کہہ کر بیان بازی کرنے والی مس نوشین شاہ کہیں تو میں وہ میسجز اور وائس نوٹ سنا دیتا ہوں جس کے بعد تنگ آ کر میں نے انہیں شادی کی لوکیشن بتائی ۔ انہوں نے وہاں آ کر بھی سب کو تنگ ہی کیا اور اب بھی کر رہی ہیں۔ یہ شادی پر آنے کیلئے بھی اتنی ہی مضطرب تھیں جتنی اب ہیں۔ مس شاہ برائے مہربانی اپنے ویوز کیلئے میری بیوی کا نام استعمال کرنا بند کریں، تمہیں اس کیلئے افسوس ہے؟ اچھا! آپ کے وائس نوٹ کے بعد اس نے بھی آپ کیلئے افسوس کا ہی اظہار کیا تھا۔یاسر حسین نے عوام سے گزارش کی کہ اگر انہیں بھارتی ٹی وی شو ’کافی ود کرن‘ کی کاپی دیکھنے کا شوق ہے تو جواب سننے کا حوصلہ بھی رکھیں، سلیبرٹی کے رشتے دار نہ بن جائیں کہ بیٹا آپ کو یہ نہیں کہنا چاہیے تھا۔ شو کا لطف لو اور آگے بڑھو، سر پر سوار نہ ہوجاؤ۔خیال رہے کہ یاسر حسین نے ایک ٹی وی پروگرام کے دوران کہا تھا کہ ان کی شادی میں بہت سے بن بلائے مہمانوں نے بھی شرکت کی ۔یاسر حسین کی ویڈیو وائرل ہونے کے بعد نوشین شاہ نے اپنے رد عمل میں کہا تھا کہ یاسر نے انہیں خود فون کرکے شادی پر مدعو کیا تھا، وہ تو بن بلائے کسی کے گھر نہیں جاتیں تو شادی پر کیسے جاسکتی ہیں؟بے وقوف اپنی گفتگو اور دانش مند اپنی خاموشی سے پہچانا جاتا ہے۔

دل لگی سے مزید