• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

آریان خان کو آج بھی ضمانت نہ مل سکی


بالی ووڈ سپر اسٹار شاہ رخ خان کے بیٹے آریان خان کو منشیات کیس میں آج بھی ضمانت نہیں مل سکی۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق شاہ رخ خان کے بیٹے آریان خان کو مزید ایک رات جیل میں گزارنا پڑے گی جہاں کیس کی سماعت کل تک ملتوی کردی گئی ہے۔ 

واضح رہے کہ آریان خان کو بھارت کے انسداد منشیات کے ادارے نارکوٹکس کنٹرول بیورو (این سی بی) نے ممبئی میں ساحل کے قریب ایک کروز شپ پر چھاپا مارکر گرفتار کیا تھا جہاں پارٹی جاری تھی۔ 

این سی بی کی جانب سے الزام عائد کیا گیا تھا کہ آریان خان کے پاس سے منشیات برآمد ہوئی ہے جس کی پہلے آریان خان نے تردید کی جبکہ بعد میں انہوں نے اس کا اعتراف بھی کرلیا تھا۔ 

ممبئی کی آرتھر روڈ جیل میں موجود آریان خان نے 2 مرتبہ درخواست ضمانت دی اور ہر مرتبہ یہ مسترد کردی گئی۔ 

تاہم اب ان کی جانب جمع کروائی گئی درخواست پر سماعت مزید ایک روز کے لیے ملتوی ہوگئی۔ 

سماعت کے دوران آریان خان کے وکیل اور سابق اٹارنی جنرل مکُل روہاتگی نے عدالت میں دلائل دیتے ہوئے کہا کہ آریان خان کے خلاف درج کیس پرانے واٹس ایپ میسجز کی بنیاد پر بنایا گیا ہے، جو غیر متعلقہ بھی ہیں اور ان کا کروز شپ سے کوئی لینا دینا نہیں ہے۔ 

ان کا کہنا تھا کہ آریان کے پاس سے نہ ہی کوئی منشیات برآمد ہوئی، نہ ہی انہوں نے کوئی منشیات استعمال کی، لہٰذا انہیں گرفتار کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔ 

سابق اٹارنی جنرل نے کہا کہ جن نوجوانوں کو گرفتار کیا گیا ہے وہ بہت ہی چھوٹے ہیں، انہیں جیل بھیجنے کے بجائے انہیں بحالی سینٹر منتقل کیا جانا چاہیے۔ 

آریان کے وکیل کا کہنا تھا کہ ان کے موکل صرف 23 سال کے ہیں، انہوں نے امریکی ریاست کیلیفورنیا میں اپنی تعلیم مکمل کی، وہ منشیات خریدنے کا گاہک نہیں ہے، نہ ہی اس نے کوئی ٹکٹ خریدا تھا، اسے تو کروز شپ پر طور مہمان خصوصی بلایا گیا تھا۔ 

انہوں نے سوال اٹھایا کہ اگر اس نوجوان سے نہ منشیات ملی اور نہ ہی اس نے یہ استعمال کی تو پھر یہ نوجوان پچھلے 20 دنوں سے جیل میں کیوں ہے؟

انٹرٹینمنٹ سے مزید