• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

کووڈ-19نے ہمارے معاملات زندگی کو بری طرح متاثر کیا ہے اور اس کے باعث ہماری زندگیوں میں کئی تبدیلیاں رونما ہوئی ہیں۔ بڑوں کی طرح اس وبا کا کافی زیادہ اثر بچوں پر بھی پڑا ہے۔ اسکولوں، مالز، پارکس اور دیگر تفریحی مقامات کی بندش کے باعث بچے گھر کے ہوکر رہ گئے تھے، جس میں ان کا زیادہ تر وقت موبائل، ٹی وی اور دیگر گیجٹس کے استعمال میں گرزتا تھا۔

تاہم، وائرس کے پھیلاؤ میں کمی اور زیادہ سے زیادہ لوگوں کے ویکسین لگنے سے صورتحال میں بتدریج بہتری آرہی ہے۔ اب ایک بار پھر تعلیمی ادارے کھول دیے گئے ہیں اور بچوں کے لیے دیگر سرگرمیوں کے مواقع بھی میسر آگئے ہیں۔ ایسے میں ضروری ہے کہ بچوں کی صلاحیتوں کو بڑھانے اور جسمانی و ذہنی طور پر تندرست و توانا رکھنے کے لیے انھیں مختلف کارآمد سرگرمیوں اور مشاغل میں مصروف کیا جائے۔ ان کے لیے ایک ایسا لائحہ عمل ترتیب دیا جائے جس میں ہر بچے کی عمر کا خیال رکھتے ہوئے ان کے لیے سرگرمیاں ترتیب دی جائیں۔

یہ ایک حقیقت ہے کہ بچوں کو ہروقت پڑھائی میں مشغول نہیں رکھا جاسکتا، انہیں دلچسپی کے مشاغل، کھیل اور سیروتفریح کی بھی ضرورت ہوتی ہے۔ غیر نصابی سرگرمیاں اور تفریح کے مواقع بچوں کو بہت کچھ سیکھنے کا موقع فراہم کرتے ہیں۔ شام کے اوقات میں بیرونی سرگرمیاں (آؤٹ ڈور ایکٹیویٹیز) انجام دینے کے لیے بچوں کا ٹائم ٹیبل ترتیب دیں۔

ان سرگرمیوں کے ذریعے بچوں کی نشوونما تیزی سے ہوتی ہے۔ کوشش کیجیےکہ آؤٹ ڈور ایکٹیویٹیز کے ساتھ ساتھ بچوں کے معمولات اور خوراک میں بھی ایک توازن قائم ہو کیونکہ اس طرح ہی بچوں کی جسمانی اور ذہنی نشو ونما میں بہتری کو یقینی بنایا جاسکتا ہے۔ ذیل میں کچھ مشاغل اور آؤٹ ڈور ایکٹیویٹیز کا ذکر کیا جارہا ہے جن پر آپ اپنے بچوں کو عمل کرواسکتے ہیں۔

تیراکی

تیراکی (سوئمنگ ) نہ صرف تفریح سے بھرپور کھیل ہے بلکہ اس میں پورے جسم کی ورزش ہوجاتی ہے۔ ماہرین کے مطابق صحت مند اور چاق چوبند رہنے کے لیے تیراکی سے اچھی کوئی ورزش نہیں ۔ آجکل چھوٹے یابڑے سائز کے سوئمنگ پول تقریباً ہر علاقے میں موجود ہیں۔ لہٰذا، بچوں کو ہفتے میں 2سے 3 روز تیراکی کروائیں کیونکہ یہ سرگرمی انھیں صحت مند اور تندرست وتوانا رکھنے کے لیے ضروری ہے ۔ 

بچوں میں ایک بار تیراکی کا شوق پیدا ہوگیا تو وہ خود ہی اسے سیکھنے کی جانب مائل ہوجائیں گے۔ اس مقصد کے لیے آپ انھیں سوئمنگ کلاسز بھی جوائن کرواسکتے ہیں۔ اس کے علاوہ بچوں کو ساحل سمندر پر لے جائیں کیونکہ ساحل سمندر کا پرسکون ماحول نہ صرف ان کی بلکہ آپ کی صحت پر بھی اچھے اثرات مرتب کرے گا۔

لائبریری جانا

کیریئر میں کامیابی کے لیے بچوں میں کتب بینی کارجحان ہونا بے حد ضروری ہے۔ کتب بینی ایسا شوق نہیں جو راتوں رات بچوں میں پیدا ہوجائے بلکہ اس شوق کی آبیاری کے لیے والدین کو ان کے بچپن سے ہی ہوم ورک کرنا ہوگا۔مثلاً آپ کو خود بھی باقاعدگی سے مطالعہ کرنا ہوگا کیونکہ والدین اولاد کے لیے رول ماڈل کی حیثیت رکھتے ہیں ۔ 

آپ کو چاہیے کہ بچوں کے ہمراہ مقامی لائبریریوں کا دورہ کریں، تاکہ بچے مختلف کتابوں کو دیکھیں اور ان کا مطالعہ کریں گے۔ ساتھ ہی دوسرے لوگوں کو مطالعہ کرتے دیکھ کر ان میں بھی کتابوں سے دوستی کا شوق پیدا ہوگا۔ اس کے علاوہ آپ بچوں کو کتابوں اور میگزین کے تحائف دے کر ان کا کتاب سے رشتہ قائم یا برقرار رکھ سکتے ہیں۔

باغبانی

باغبانی کے بے شمار فوائد سے ہم سب ہی آگاہ ہیں اور اس بات کو تسلیم کرتے ہیں کہ باغبانی انسانی مزاج و دماغ پر مثبت اثرات مرتب کرتی ہے۔ لیکن کیا آپ جانتے ہیں کہ جو بچے باغبانی کا مشغلہ اپناتے ہیں ان کی دماغی و جسمانی صحت کے ساتھ ساتھ اخلاقی تربیت بھی بآسانی ممکن بنائی جاسکتی ہے۔ 

ایک تحقیق کے مطابق جو بچے بچپن ہی سے باغبانی کا شوق رکھتے ہیں ان میں دوسرے بچوں کی نسبت احساس ذمہ داری، ماحول دوست عادات اور خود اعتمادی کا جذبہ زیادہ پایا جاتا ہے۔ آپ بچوں میں باغبانی کا شوق پیدا کرنے کے لیے گارڈن میں ایک چھوٹا سا حصہ بچوں کے لیے مختص کردیں۔وہاں بچوں کے پسندیدہ پھول اور پودے ان کے ساتھ مل کر لگائیں، ساتھ ہی انھیں یہ بتائیں کہ ان پودوں کو کب کب اور کتنا پانی دینا ہے۔ اس طرح بچوں میں احساس ذمہ داری کا جذبہ بھی پیدا ہوگا اور ماحول دوست عادتیں بھی پروان چڑھیں گی۔

مارشل آرٹ

مارشل آرٹ ناصرف ایک کھیل ہے بلکہ یہ جسمانی و ذہنی طور پر تندرست اور توانا رہنے کا بھی ذریعہ ہے۔ یہ بچوں کی ذہنی صلاحیتوں کو پروان چڑھانے کے ساتھ ان میں حوصلہ پیدا کرتا ہے۔ آپ بچوں کی توجہ مارشل آرٹ کی جانب مبذول کرسکتے ہیں۔ بہت سی اکیڈمیز اور مارشل آرٹ کلب بچوں کے لیے مارشل آرٹ کے مختلف کورسز ترتیب دیتے ہیں جہاں انھیں جمناسٹک، داؤ شو (روایتی تلوار کا استعمال) اور کنگ فو کی تیکنیکس سکھائی جاتی ہیں۔آپ بچوں کو یہ کلاسز جوائن کرنے کے لیے تیار کرسکتے ہیں۔