آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
منگل14؍شوال المکرم 1440ھ 18؍جون 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن


کراچی (نیوز ڈیسک) امریکی ریاست کیلیفورنیا کے شہر سان فرانسسکو میں دنیا کا پہلا روبوٹک ریستوراں رواں سال ستمبر میں کھولا جا رہا ہے جس میں سب سے اہم بات یہ ہے کہ اس میں تمام امور مشینیں انجام دیں گی، انسان کوئی کام نہیں کرے گا۔

سان فرانسسکو میں پہلا مکمل روبوٹک ریستوران ستمبر میں کھلے گا

برطانوی اخبار کی رپورٹ کے مطابق، ریسٹورنٹ میں نصب کی جانے والی مشینیں اور روبوٹ وہ تمام کام کر سکتے ہیں جو آج تک انسان کرتے آئے ہیں، یہاں نصب کیا جانے والا باورچی روبوٹ برگر کیلئے کباب (پٹیز) تل سکتا ہے، بن کو مکھن لگا کر انہیں سینک سکتا ہے، ان پر مختلف چٹنیاں (ساس) لگا سکتا ہے اور ساتھ ہی میز پر آپ کو پیش بھی کرے گا، یہ تمام کام کرنے میں صرف پانچ منٹ خرچ ہوں گے۔

رپورٹ کے مطابق، یہ نظام بنانے میں 8؍ سال کا عرصہ لگ گیا کیونکہ برگر تیار کرنے والا روبوٹ بنانے میں کئی مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔

کچن میں نصب کی جانے والی 14؍ فٹ روبوٹک مشین، جسے ریستوراں کے مالک نے ’’کولینری انسٹرومنٹ‘‘ کا نام دیا ہے، کو چلانے کیلئے 20؍ کمپیوٹرز، 350؍ سینسرز اور 50؍ ایکچوئیٹرز (ڈسک ڈرائیو سسٹم) نصب کیے گئے ہیں۔

سان فرانسسکو میں پہلا مکمل روبوٹک ریستوران ستمبر میں کھلے گا

اس نظام میں پنیر، ٹماٹر، پیاز اور اچار (پکل) رکھنے کیلئے مختلف ٹیوبز بھی نصب کی گئی ہیں جو فوری طور پر روبوٹ کو یہ سامان فراہم کرکے اپنا کام پورا کرنے میں مدد دیتی ہیں۔

سب سے پہلے مشین برگر بن کو کاٹ کر اسے سینکتی ہے جس کے بعد اس پر مختلف ٹاپنگز، مصالحے اور ساسز و چٹنیاں لگاتی ہے اور اس کے بعد کباب (پٹیز) کو پکاتی ہے۔

کولینری انسٹرومنٹ میں نصب بازو برگر سینکنے کیلئے اسے پلٹ بھی سکتا ہے اور حیران کن بات یہ ہے کہ یہ پورا نظام چلانے کیلئے انسانی مدد کی ضرورت بالکل پیش نہیں آتی۔

برگر بنانے پر صرف 6؍ ڈالر خرچہ آتا ہے۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ چونکہ برگر بنانے کیلئے کسی انسان کی ضرورت نہیں اسلئے یہ حفظانِ صحت کے اصولوں کے عین مطابق تیار ہوگا۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں

دلچسپ و عجیب سے مزید
ویڈیو رپورٹس سے مزید
دنیا بھر سے سے مزید
دلچسپ و عجیب سے مزید