آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
اتوار 13؍جمادی الاوّل 1440ھ 20؍جنوری2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

خیبر پختونخوا کو فراہم کی گئی 4 ارب 29کروڑ روپے کی گندم پر13 ارب سے زائد سود لینے کا انکشاف ہوا ہے،وزیراعلیٰ محمود خان نے معاملے کا نوٹس لیتے ہوئے انکوائری کا حکم دے دیا۔

دوسری جانب صوبائی  وزیراطلاعات شوکت یوسفزئی کا کہنا ہے کہ گندم نہیں آئی تاہم معاملے کی چھان بین کے لیے ڈائریکٹر فوڈ کو سندھ بھیجا جارہا ہے ۔

ٹریڈنگ کارپوریشن آف پاکستان نے صوبائی  حکومت سے 2004،2007 اور 2009 کے درمیان خریدی گئی گندم پر 13 ارب 21کروڑ روپے سے زیادہ کے سود کی ادائیگی کا مطالبہ کیا،صوبائی حکومت نے 4 ارب 29 کروڑ کی گندم منگوائی تھی۔

ٹی سی پی نے حکومت کو خبردار کیا ہے کہ اگر رقم فوری ادا نہ کی گئی تو سود کی رقم بڑھ سکتی ہے۔

اس حوالے سے شوکت یوسفزئی نے کہاکہ گندم کا ریکارڈ نہیں مل رہا،ٹریڈنگ کارپوریشن کے پاس ثبوت ہیں تو سامنے لائے۔

انہوں نے کہاکہ ڈائریکٹر فوڈ کو معاملے کی چھان بین کے لیے سندھ بھیجا جارہا ہے۔

صوبائی وزیرنے کہا کہ پرانا کیس ہے جس کے دوران چار حکومتیں گزر گئی ہیں۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں