آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
جمعرات15؍ جمادی الثانی 1440ھ 21؍فروری 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

ماہرین موسم سرما کو عموماً ’ فلو سیزن‘ بھی کہتے ہیں۔ سینٹر فار ڈیزیز کنٹرول کی رپورٹ کے مطابق فلو سیزن نومبر سے مارچ کے درمیان تک جاری رہتا ہے۔ آفس میں ساتھی ورکرز سے لگنے والا فلو یا اسکول میں فلو سے متاثرہ بچوں سے آپ کے بچے کو لگنے والا فلو، یہ سب کچھ ایسا ہے جو یقیناً آپ کنٹرول نہیں کرسکتے ،لیکن آپ اپنے گھر کا ماحول ضرور بہتر بناسکتے ہیں۔ ماہرین کے مطابق موسم سرما کو خوش آمدید کہنے کے لیے گرم ملبوسات کی خریداری سے قبل، موسم سرما کی بیماریوں سے حفاظت کے طور پر اعتدال پسندانہ رویہ اختیار کریں۔ اپنے گھر میں چھوٹی چھوٹی لیکن قدرے اہمیت رکھنے والی تبدیلوں کے ذریعے آپ اپنے گھر میں ایک صحت مند ماحول قائم کرسکتے ہیں۔ یہ تبدیلیاں کیسے لائی جاسکتی ہیں آئیے جانتے ہیں۔

ہاتھ دھونا

ماہرین کے مطابق انسانی جسم میں زیادہ تر جراثیم کھانے پینے کے دوران ہی منتقل ہوتے ہیں۔ ہم سے بچپن میں اکثر کہا جاتا تھا کہ ہاتھ دھونےکا عمل جراثیم کا خاتمہ کرتا ہے جب کہ بیماریاں دور بھاگتی ہیں۔ اس میں کوئی راکٹ سائنس نہیں ، نہ ہی ہاتھ دھونے کا کوئی خاص موسم ہوتا ہے۔ لیکن کنبہ کے تمام افرادکو بار بار ہاتھ دھونے سے متعلق تنبیہہ کرنے کے بجائے کیوں نہ کچھ تخیلانہ طریقہ کار اختیار کیاجائے جس سے وہ خود ہی ہاتھ دھونے کی طرف مائل ہوجائیں۔ مثلاً اپنے گھر کے تمام باتھ رومز میں بہترین اور منفرد طرز کے ہینڈ واشنگ اسٹیشن بنائیںتاکہ گھر والے ہاتھ دھونے میں دلچسپی لیں۔ اس سلسلے میںہینڈ واش ایریابہترین خوشبو والے صابن، ایک نرم تولیہ، موئسچرائزر(ایسا موئسچرائزز جو ہاتھوں کی خشکی دور کرکے انھیں نرم ونازک رکھنے میں بھی مددگار ثابت ہو)، سینٹڈ کینڈل اور اس کے علاوہ دیگر تمام چیزیں جو باتھ روم میں ایک بہترین اورخوشگوار ہینڈ واش ایریاتخلیق کرنے میں مددگار ہوں، کا اضافہ کارآمد ثابت ہوسکتا ہے۔

دوسری جانب جراثیم سے بچنے کے لیے اس بات کا خیال رکھیں کہ گھر کے تمام افراد ایک ہی تولیہ استعمال نہ کریں، واش روم ایریا میں کپڑے کے تولیے کے بجائےکاغذی ٹشوز کا استعمال بہتر رہتا ہے۔ اس کے علاوہ اپنا ٹو تھ برش ہمیشہ کیپ سے ڈھانپ کر رکھیں اور فلو سے متاثرہ افراد کا ٹوتھ برش دیگر سے الگ رکھیں۔

صفائی پر دگنی توجہ

موسم سرما کے دوران صفائی ستھرائی کا جتنا خیال رکھا جائے گا آپ کا گھر اتنا ہی جراثیم اور بیماریوں سے محفوظ رہے گا۔ اگر آپ یہ کام پہلے نہیں کرتے تھے تو اب آپ کو اپنی عادت بنانی ہوگی۔ صفائی کی ضرورت نہ صرف دیواروں اور فرنیچر کو ہوتی ہے بلکہ گھر کی ہر چھوٹی سے چھوٹی اور معمولی اشیا بھی صحت مند ماحول کے قیام کے لیے صفائی کی متقاضی ہوتی ہیں۔ اس بات کو یقینی بنائیں کہ کچن کاؤنٹر ٹاپ کا نہ صرف اوپری حصہ بلکہ نچلا بھی جراثیم سے پاک ہو، ساتھ ہی دروازوں کی کنڈیاں، سوئچ بورڈ، کیبنٹ کے ہینڈل کہیں دھول مٹی میں اٹے ہوئے تو نہیں۔ چونکہ فلو ایک ایسا وائرس ہے جو ایک شخص سے دوسرے شخص کو جلد منتقل ہوتا ہے، لہٰذا اس بات کو یقینی بنائیں کہ جب اسکول اور آفس وغیرہ میںیہ وائرس پھیلا ہوا ہو تب زیر استعمال بیڈ شیٹس، تولیے اور چادر عام دنوں سے زیادہ تعداد میں دھوئیں اور اگر آپ خود فلو سے متاثرہ ہوں ڈش تولیے کو بھی عام دنوں سے ہٹ کر زیادہ سے زیادہ دھوئیں۔ گھر کے تمام خفیہ اور پوشیدہ حصوں کی صفائی پر خاص دھیان دیںمثلا ًچولہوں کے بٹن، کاؤنٹر ٹاپ، باتھ روم کے دروازوں کے ہینڈل اور ٹوتھ برش ہولڈر وغیرہ کی صفائی پر دگنی توجہ دیں۔ ساتھ ہی صفائی کے لیے اسفنج کا استعمال ہر گز نہ کریں اس کے بجائے ڈسپوزایبل پیپر تولیوں کا استعمال زیادہ بہترین رہے گا لیکن صفائی کے بعد اس کپڑے یا تولیے کی دھلائی بھی لازمی کی جائے۔

بستر کی تیاری

آپ کا بستر موسم سرما میں دگنی صفائی چاہتا ہے لہٰذا بیڈ شیٹ ، کمبل اور تکیوں کی دھلائی و صفائی کا خاص خیال رکھیں۔ دوسری جانب بہتر نیندکے لیے بستر جتنا آرام دہ ہو گا آپ اتنی ہی زیادہ اچھی نیند حاصل کریں گے۔ نیند اس موسم میں بیماریوں سے نمٹنے کا بہترین طریقہ ہے، آپ یا آپ کے خاندان کے دیگر تمام افراد جس طرح بہتر نیند حاصل کرسکیں وہی طریقہ اختیار کریں مثلاً اگر بچے ٹوئنکل لائٹس میں سونے کے عادی ہیں تو ان کے کمروں میں ٹوئنکل لائٹس کا اضافہ کریں، اگر آپ ہلکے ٹمپریچر میں سونے کے عادی ہیں تو ہلکا سا اے سی آن کرلیں، تاکہ بھرپور نیند لے سکیں۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں