آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
اتوار 16؍ذوالحجہ 1440ھ 18؍اگست 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

سپریم کورٹ نے سینٹرل سپیریئر سروسز (سی ایس ایس) امتحان کے رولز میں تبدیلی کے معاملے پر سابق چیف جسٹس ثاقب نثار کا فیصلہ کالعدم قرار دیدیا۔

سی ایس ایس امتحان کے رولز 2013 میں غیر قانونی تبدیلی سے متاثرہ امیدوار غلام مرتضیٰ قاضی کی درخواست پر سپریم کورٹ کے 3 رکنی بینچ نے سماعت کی۔

متاثرہ امیدوار نے درخواست میں کہا تھا کہ سابق چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں 3 رکنی بنچ نے نظر ثانی اپیل اس کا موقف سنے بغیر ہی مسترد کر دی تھی اور فیڈرل پبلک سروس کمیشن کی طرف سے سی ایس ایس رولز کو نگران حکومت سے پرانی تاریخوں میں منظور کرانے کو درست قراردیا تھا۔

جسٹس عمر عطا بندیال کی سربراہی میں جسٹس منیب اختر اور جسٹس یحیٰ آفریدی نے غلام مرتضیٰ قاضی کی نظر ثانی پٹیشن سماعت کےلئے منظور کرلی۔

سی سی ایس امتحان کے رولز میں تبدیلی کی خبر چلنے کے بعد سینیٹ کمیٹی نے معاملہ ایف آئی اے کو بھیجا تھا۔

سابق چیف جسٹس ثاقب نثار نے ایف پی ایس سی رولز کی پرانی تاریخوں میں تبدیلی حکومت سے منظور کرانے کو درست قرار دیا تھا اور متاثرہ امیدوار کا موقف سنے بغیر نظر ثانی اپیل مسترد کردی تھی۔

سی ایس ایس رولز میں غیر قانونی طور پر تبدیلی کی خبر جیو نیوز پر نشر ہونے کے بعد سینیٹ کی قائمہ کمیٹی نے اس معاملے کا جائزہ لیا تھا اور ایف پی ایس سی حکام کا مؤقف مسترد کرتے ہوئے ایف آئی اے کو ان کے خلاف غلط بیانی اور جعلسازی کی کارروائی کر کے 45 دن میں رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کی تھی۔

قومی خبریں سے مزید