آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
منگل19؍ذیقعد 1440ھ 23؍جولائی 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن


کینسر کے مرض میں مبتلا مریضوں کے لئے طاقت اور جرات کی علامت بھارتی اداکارہ سونالی باندرے نے انکشاف کیا ہے کہ جب انہیں ’’ہائی گریڈ کینسر‘‘ جیسے موذی مرض کی تشخیص ہوئی تو وہ پوری رات روئیں۔

بھارتی ویب سائٹ ٹائمز آف انڈیا کی رپورٹ کے مطابق سونالی باندرے نے کینسر تشخیص کے بعد ہمت کا مظاہرہ کرتے ہوئےحالات سے سمجھوتا کر لیا اور ارادہ کیا کہ وہ آئندہ نہیں روئیں گی۔

اداکارہ نے اپنے شوہر گولڈی بہل کو اپنی زندگی میں سب سے اہم شخص قرار دیتے ہوئے کہا کہ انہوں نے میری زندگی کے اس مشکل فیز سے نکلنے میں میری بہت مدد کی۔

یاد رہے سونالی باندرے نے گولڈی بہل سے 2002 میں شادی کی تھی اور دونوں کا ایک بیٹا رنویر بہل ہے۔

واضح رہے کینسر کے مرض کو شکست دینے والی بالی ووڈ کی معروف اداکارہ سونالی باندرے تقریباً دو ماہ امریکا کے شہر نیویارک میں زیر علاج رہنے کے بعدصحت یاب ہو کر دسمبر میں واپس بھارت پہنچی تھیں۔

44سالہ سونالی باندرے نے کیریئر کا آغاز 1994 میں ریلیز ہونے والی فلم ’آگ’ سے کیا، انہوں نے 50 کے قریب فلموں میں اداکاری کے جوہر دکھائے۔

سونالی باندرے کی مشہور فلموں میں ‘کل ہو نہ ہو، لجا، جس دیش میں گنگا بہتی ہے، ہمارا دل آپ کے پاس ہے، ڈھائی اکشر پریم کے، زخم، انگارے، میجر صاحب، دل جلے،بھائی، انگلش بابو، دیسی میم، ثپوت‘ اور ’اپنے دم پر‘ شامل ہیں۔

ان کی آخری فلم ’ونس اپون ٹائم ان ممبئی: دوبارہ‘ 6سال قبل 2013 میں ریلیز ہوئی تھی۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں