آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
جمعرات27 ؍جمادی الاوّل 1441ھ 23؍جنوری 2020ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
تازہ ترین
آج کا اخبار
کالمز

برسلز میں دوسرا کشمیر آگاہی کیمپ، عالمی برادری کشمیریویں کو حق خودارادیت دلوائے، علی رضا سید

برسلز (حافظ انیب راشد) مقبوضہ کشمیر میں کئی ماہ سے مسلسل محاصرے اور کشمیریوں پر جاری مظالم کے بارے میں آگاہی پیدا کرنے کے لیے بلجیم کے دارالحکومت برسلز میں کشمیر کونسل ای یو کے زیراہتمام سوموار کے روز دوسرا ’’کشمیر آگاہی کیمپ‘‘ لگایا گیا۔ یہ ایک روزہ کیمپ یورپی ہیڈکوارٹرز میں ’’پلس شومان‘‘ کے مقام پرای یو ایکسٹرنل ایکشن سروس (یورپی وزارت خارجہ) کے دفتر کے سامنے مقامی وقت کے مطابق، صبح گیارہ بجے سے شام چار بجے تک جاری رہا۔ یورپی محکمہ خارجہ کے سامنے ایک ہفتے میں یہ دوسرا کشمیر آگاہی کیمپ ہے۔ اس سے قبل جمعرات کے روز اسی مقام پر اس سال کا پہلا کشمیر آگاہی کیمپ لگایا تھا۔ برسلز میں کشمیر آگاہی کیمپ کے اختتام پر جاری ہونے والے کشمیرکونسل ای یو کے ایک بیان کے مطابق، یہ آگاہی مہم پورا سال جاری رہے گا اور اس دوران آگاہی کیمپوں، مظاہروںاجتماعات، کانفرنسوں، سیمیناروں اور ملاقاتوں کے ذریعے مقبوضہ کشمیر کی صورتحال کے بارے میں یورپی اعلیٰ حکام اور یورپی

باشندوں کو آگاہ کیا جائے گا۔ سوموار کو آگاہی کیمپ کے دوران سخت سردی کے باوجود بڑی تعداد میں یورپی لوگوں نے کشمیریوں کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کیا اور مقبوضہ کشمیر کے عوام پر مظالم بند کروانے کے مطالبے کی حمایت کی۔ واضح رہے کہ بھارت نے اگست میں جموں و کشمیر کی جداگانہ حیثیت ختم کرکے مقبوضہ وادی میں کرفیو لگا دیا تھا۔ اس وقت سے ابتک مسلسل بھارتی فورسز کے ہاتھوں مقبوضہ کشمیر کے لوگوں کا محاصرہ جاری ہے، ہزاروں لوگ گرفتار ہیں اور ذرائع آمد و رفت مسدود اور مواصلاتی رابطے محدود ہیں۔ نئے سال کے آغاز پر کشمیرکونسل ای یو کا یہ آگاہی کیمپ اس لئے بھی اہمیت کا حامل ہے کیونکہ گذشتہ دنوں یورپی یونین کی اعلیٰ سطح قیادت میں بڑی تبدیلی آئی ہیں۔ ان تبدیلیوں کے تحت یورپی کونسل کے سربراہ اور اعلیٰ سفارتی نمائندہ سمیت یونین کی نئی قیادت سامنے آئی ہے۔ کیمپ کے دوران یورپی باشندوں میں آگاہی کے لیے مقبوضہ کشمیر کی تازہ ترین صورتحال اور تنازعہ کشمیر کے حوالے سے معلوماتی بروشرز بھی تقسیم کئے گئے۔ کیمپ کے منتظمین نے یورپی باشندوں سے مظلوم کشمیریوں کی حمایت میں دستخط بھی لئے جو یورپ میں جاری کشمیر کونسل ای یو کی ایک ملین دستخطی مہم کا حصہ ہے۔ کیمپ کے منتظمیں میں کشمیر کونسل ای یو کے سینئر عہدیدار چوہدری خالد جوشی، سینئر کشمیری رہنماء سردار صدیق، ادبی شخصیت شیراز راج، سماجی شخصیات آندرے بارس، کینتھ راؤ، راجہ عبدالقیوم، مہر ندیم، حسن علی اور دیگر شامل تھے۔ پیر کے روز کیمپ کے موقع پر چیئرمین کشمیر کونسل ای یوعلی رضا سید نے کہاہے کہ ہم مقبوضہ کشمیر کی تازہ ترین صورتحال اور تنازعہ کشمیر کی حقیقت کے بارے میں دنیا کو آگاہ کرتے رہیں گے۔ آج پانچ ماہ گزر چکے ہیں کہ بھارت نے مقبوضہ وادی کا مسلسل محاصرہ کیا ہوا ہے جس سے آٹھ ملین انسان بری طرح متاثر ہو رہے ہیں، ان کی زندگی مفلوج ہے اور انہیں بے پناہ مشکلات کا سامنا ہے۔ انھوں نے عالمی طاقتوں بشمول امریکہ اور یورپی یونین اور انسانی حقوق کی عالمی تنظیموں سے مطالبہ کیا کہ وہ مقبوضہ کشمیر میں ظلم و ستم بند کرواکر کشمیریوں کو ان کا حق خودارادیت دلوانے میں ان کی مدد کریں۔ 

یورپ سے سے مزید