آپ آف لائن ہیں
بدھ10؍ربیع الاوّل 1442ھ28؍اکتوبر 2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

کراچی، گیس سلینڈر نصب اسکول وینز و دیگر گاڑیوں کیخلاف کارروائی

حیدر آباد سے کراچی آتے ہوئے موٹروے ایم نائن پر حادثے کے بعد مسافر وین میں آتشزدگی کے واقعہ میں جانی نقصان کے بعد کراچی میں سیلنڈر نصب کمرشل گاڑیوں کے خلاف ٹریفک پولیس کی جانب سے غیرمعمولی مہم جاری ہے۔

 پولیس کی جانب سے جاری مہم میں اب تک سیکڑوں اسکول وینز، بسوں اور کمرشل گاڑیوں کے خلاف کارروائی کی جاچکی ہے اور یہ سلسلہ جاری ہے۔ 

سی این جی اور ایل پی جی گیس کے سلنڈر رکھنے والی اسکول وینز اور انٹرسٹی بسوں کو خاص طور پر چیک کیا جا رہا ہے، ان کمرشل گاڑیوں کی بھی پکڑ دھکڑ کی جا رہی ہے جن میں سی این جی یا ایل پی جی گیس نصب ہیں۔ 

ٹریفک پولیس ذرائع کے مطابق ضبط کی گئی بیشتر گاڑیوں کو کراچی جنوبی کے ریڈ زون میں گورنر ہاؤس کے قریب دین محمد وفائی روڈ پر وائی ایم سی اے گراؤنڈ میں رکھا جا رہا ہے۔

ٹریفک پولیس ترجمان کے مطابق اس سلسلے میں پورے کراچی میں مہم زوروں پر ہے، پولیس کے مطابق اس سلسلے میں عدالت کی جانب سے بھی احکامات جاری کیے جا چکے ہیں۔

ترجمان کے مطابق مختلف حادثات میں جانی نقصان کے بعد پولیس مختلف اوقات میں اس طرح کی مہم چلاتی رہتی ہے۔ 

ترجمان کے مطابق کسی بھی اسکول وینز، مسافر بسوں اور کنٹریکٹ گاڑیوں میں سی این جی یا ایل پی جی سلنڈر لگانا غیر قانونی ہے، ایسی تمام گاڑیوں سے سیلنڈر نکالے جا رہے ہیں اور گاڑیوں کے چالان کرنے کے ساتھ ان کے ڈرائیورز کو بھاری جرمانے بھی کیے جا رہے ہیں۔ 

دوسری طرف اس اچانک مہم کی وجہ سے اسکولوں میں موجود بچوں کو گھر واپس جانے کے لیے شدید دشواری کا سامنا کرنا پڑا۔

واضح رہے کہ دو روز قبل حیدرآباد سے کراچی آتے ہوئے ایک پوسٹر کو حادثے کے بعد آگ لگ گئی تھی جس کے نتیجے میں 14 مسافر زندگی جل کر ہلاک ہوگئے تھے جبکہ مختلف اسپتالوں میں زیر علاج چار سے زائد مزید زخمی جاں بحق ہوچکے ہیں۔

قومی خبریں سے مزید