• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

اسپتال میں آکسیجن فراہم نہیں کیا جارہا، راہول ووہرا کی آخری ویڈیو وائرل

نئی دہلی (مانیٹرنگ ڈیسک)کورونا وائرس سے 9 مئی کو چل بسنے والے بھارتی اداکار اور سوشل میڈیا اسٹار راہول ووہرا کی مرنے سے قبل بنائی گئی آخری ویڈیو سامنے آگئی، جسے دیکھنے کے بعد لوگ آبدیدہ ہوگئے۔راہول ووہرا نے مرنے سے قبل 8 مئی کو فیس بک پر اپنی آخری پوسٹ میں بتایا تھا کہ وہ بہتر علاج نہ ہونے کی وجہ سے مر رہے ہیں۔انہوں نے اپنی آخری پوسٹ میں اپنا تعارف کراتے ہوئے بتایا تھا کہ وہ دارالحکومت نئی دہلی کے راجیو گاندھی سپر اسپیشلٹی ہاسپیٹل کی چھٹی منزل پر زیر علاج رہے مگر اب وہ ہمت ہار چکے ہیں اور مرنے والے ہیں۔سوشل میڈیا اسٹار نے لکھا تھا کہ وہ جلد نیا جنم لے کر آئیں گے اور اچھے کام کریں گے مگر اب ان کی ہمت جواب دے چکی ہے۔مذکورہ پوسٹ کے کچھ ہی گھنٹوں بعد راہول ووہرا مبینہ طور پراسپتال عملے کی لاپرواہیوں کے باعث چل بسے تھے۔راہول ووہرا گزشتہ 5دن سے ایک ہفتے سے مذکورہ اسپتال میں زیر علاج تھے، انہوں نے 4 مئی کو بھی اپنی فیس بک پوسٹ میں اسپتال میں اچھا علاج میسر نہ ہونے کی شکایت کرتے ہوئے مدد مانگی تھی۔انہوں نے مذکورہ پوسٹ میں بتایا تھا کہ انہیں اسپتال میں درست انداز میں آکسیجن فراہم نہیں کیا جا رہا، اس لیے انہیں کوئی ایسا اسپتال بتایا جائے، جہاں آکسیجن کے ساتھ بستر موجود ہو۔انہیں کوئی لوگوں نے سکھوں کی عبادت گاہ گردوارہ چلے جانے کی بھی تجویز دی تھی مگر وہ مرتے دم تک دہلی کےاسپتال میں ہی موجود تھے۔ ان کی ہلاکت کے بعد اب ان کی بیوہ اور اداکارہ جیوتی تواری نے ان کی بنائی گئی آخری ویڈیو کو سوشل میڈیا پر شیئر کردیا، جسے دیکھنے کے بعد کئی لوگ آبدیدہ ہوگئے۔جیوتی تواری نے اپنے مرحوم شوہر کی آخری ویڈیو کو شیئر کرتے ہوئے لکھا کہ یہ تو سب جانتے ہیں کہ راہول چلے گئے لیکن یہ کوئی نہیں جانتا کہ وہ کیسے چلے گئے؟انہوں نے لکھا کہ راہول ووہرا اسپتال کی غفلت کی وجہ سے چل بسے، انہوں نے امید کا اظہار کیا کہ ان کے شوہر کو انصاف ملے گا اور ان کے راہول کی طرح دوسرا کوئی نہیں مرے گا۔یاد رہے کہ بھارت میں اس وقت کورونا متاثرین کی تعداد سوا دو کروڑ سے زائد جب کہ اموات کی تعداد سوا دو لاکھ سے زائد ہوچکی ہے اور ہلاک ہونے والوں میں نوجوان بھی شامل ہیں۔

دل لگی سے مزید