| |
Home Page
منگل23 ربیع الاوّل 1439ھ 12 دسمبر2017ء
انور شعور
December 12, 2017
سیاست

گو بتاتے نہیں ہمیں لیڈرکوئی منشور کوئی نصب العین گرم بازاریٔ سیاست سے رات کو چین ہے نہ دن کو چین
December 11, 2017
وہ

دیتے ہیں قابلِ گرفت بیانکوئی خفّت انہیں نہ کوئی ڈرجیل جانے کے ہیں وہ خواہش مندتاکہ بن جائیں مستند لیڈر
December 10, 2017
ریٹ

بڑھ گیا بازار میں ڈالر کا ریٹہاتھ یوں سکڑا کہ سکڑا رہ گیاکم ہوئی قیمت روپے کی اس قدرنوٹ بس کاغذ کا ٹکڑا رہ گیا
December 09, 2017
مگن

لڑنے بھڑنے میں مگن ہیں صبح و شامبے نیازِ مقصد و منشور ہیںفوج تو جمہوریت کے ساتھ ہےرہنما جمہوریت سے دور ہیں
December 08, 2017
سپر طاقت

نہیں محتاج اجازت کا کسی کیسبھی کچھ بے اجازت کررہا ہےسپر طاقت ہے امریکہ لہٰذاوہ دنیا پر حکومت کررہا ہے
December 07, 2017
اقتدار

عجب دور ہے عرصۂ اقتدارکہ بدقسمتی سے اگر جائے چِھننہیں بھولتا آدمی تاحیاتوہ صبحیں، وہ شامیں، وہ راتیں، وہ دن
December 06, 2017
فائدہ

اگر ہو آدمی کی جیب خالیسیاسی حیثیت کا فائدہ کیاکرپشن کی اجازت بھی نہ ہو توبھلا جمہوریت کا فائدہ کیا
December 05, 2017
خطاب

خوب تھا جلسے میں لیڈر کا خطابواہ وا ہوتی رہی ہر بات پرلوگ پورے وقت سر دھنتے رہےگالیوں پر اور الزامات پر
December 04, 2017
طاقتیں

شور جن بعض طاقتوں کا ہےچَپکی بیٹھی ہیں دھر کے ہاتھ پہ ہاتھہو رہی ہیں خلاف تقریریںسن رہی ہیں وہ بے بسی کے ساتھ
December 03, 2017
قیمتیں

شکوؤں سے، شکایتوں سے ہوں گیبڑھتی ہوئی قیمتیں کہاں کممل جل کے نہ کیوں اب ایک دھرنامہنگائی کے مسئلے پہ دیں ہم
December 01, 2017
نعت ِنبیؐ

پیشِ نظر ہے رُوئے پُر انوار آپؐ کادیدار ہورہا ہے لگاتار آپؐ کاہم دشت میں رہیں کہ سمن زار میں رہیںیہ دشت آپؐ کا، یہ سمن زار آپؐ کاکرتا ہے ذکرِ خیر اَدب و احترام سےدُنیا میں ہر ذریعۂ اظہار آپؐ کاگفتار ہے جہاں میں تو گفتار آپؐ کیکردار ہے جہاں میں تو کردار آپؐ کاجس تک بڑے بڑوں کو پہنچنا نہیں نصیبہے ہر معاملے میں وہ معیار آپؐ...
November 30, 2017
ضرورت

کبھی غلبے کی خواہش ہو کسی پرتو کرلیتا ہے وہ پیدا ’’ضرورت‘‘جسے اقدام کی طاقت ہو حاصلاُسے سازش کی آخر کیا ضرورت
November 29, 2017
ستارے

وہ دھرنوں میں تدبیر کیا آزمائیںکوئی راست اقدام بھی کیا کریںجب اُن کے ستارے ہی گردش میں ہوںتو بیچارے حکّام بھی کیا کریں
November 28, 2017
آخر ِ کار

بیس اکّیس روز بعد سہیرک گیا احتجاج آخرِ کارمسئلہ حل ہوا کسی حد تک ’’لیک بعد از خرابیٔ بسیار‘‘