فوج اور پولیس کے 10جوان TTP اور TLP کے ہاتھوں شہید ہوئے، سینیٹر مصطفی نواز کھوکھر

October 28, 2021

سینیٹر مصطفیٰ نواز کھوکھر کا کہنا ہے کہ صرف کل کے دن فوج کے 2، پولیس کے 4 جوان خیبر پختونخواہ میں ٹی ٹی پی جبکہ 4 جوان پنجاب میں ٹی ایل پی کے ہاتھوں شہید ہوئے ہیں۔

سینیٹر مصطفیٰ نواز کھوکھر نےاسلام آباد کی طرف مارچ کرنے والے کالعدم تنظیم کے کارکنوں سے متعلق اپنے بیان میں کہا ہے کہ صرف کل کے دن سیکیورٹی فورسز کے دس بہادر جوانوں نے مذہبی شدت پسندوں سے لڑتے ہوئے جانیں دی ہیں۔

سینیٹر مصطفیٰ نواز کھوکھر نے سوال اٹھاتے ہوئے کہا کہ پولیس اور فوج کے جوان کب تک اسلام آباد اور پنڈی کی غیر دانشمندانہ پالیسیوں کی قیمت ادا کرتے رہیں گے؟

اُن کا مزید کہنا تھا کہ آج بھی ہمارے مسائل کا حل نیشنل ایکشن پلان پر من و عن عمل کرنے پر ہے، مذہب اور شدت پسند تنظیموں کو جب بھی سیاسی مقاصد کے لیے استعمال کیا جائے گا یہی نتیجہ نکلے گا، یہ بات ہماری ریاست اور سیاسی جماعتوں کے پلے کب پڑے گی ؟

سینیٹر مصطفی نواز کھوکھر نے کہا کہ اس موقع پر اگر ہم صرف یکجا ہو کر پنجاب پولیس کہ ساتھ کھڑے ہو جائیں تو رینجرز کی بھی ضرورت نہیں، پنجاب پولیس میں ان فسادیوں سے نمٹنے اور ان کی تسلی بخش چھترول کرنے کی مکمل اہلیت ہے۔

سینیٹر مصطفی نواز کھوکھر کا کہنا تھا کہ میں کم از کم اپنی ذات کی حد تک پنجاب پولیس کے جوانوں اور افسران کے ساتھ اس مشکل گھڑی میں کھڑا ہوں۔