عارف علوی کا بھارت سے دلچسپ تعلق

September 05, 2018
 

نو منتخب صدر ڈاکٹر عارف علوی کابھارت کے ساتھ دلچسپ تعلق یہ ہے کہ تقسیم ہند سے قبل ان کے والد ڈاکٹر الٰہی علوی بھارت کے پہلے وزیر اعظم جواہر لعل نہرو کے دانتوں کا علاج کرتے رہے ہیں۔

ڈاکٹر عارف علوی حکمران جماعت پاکستان تحریک انصاف کے قیام سے قبل ہی عمران خان کے ساتھیوں اور تحریک انصاف کے متحرک بانی اراکین میں سے ایک ہیں۔69 سالہ سابق دندان ساز 353 ووٹوں کی واضح اکثریت سے13 ویں صدر مملکت منتخب ہو گئے۔

پاکستان تحریک انصاف کی جانب سے ان کی سوشل میڈیا ویب سائٹ پر نئے صدر کی شارٹ بائیو گرافی جاری کی گئی ہے۔

بائیو گرافی کے مطابق عارف علوی کا بھارت سے تعلق ناصرف نہرو کےطبیب کے صاحبزاد ے ہونے کی حیثیت سے ہے بلکہ وہ پاکستان کے تیسرے ایسے صدر ہیں جن کا خاندان تقسیم ہند کے بعدہجرت کر کے پاکستان منتقل ہوا۔

سابق صدور پرویز مشرف اور ممنون حسین کا خاندان بھی بھارت سے پاکستان ہجرت کر کے آیا تھا۔ ممنون حسین کے خاندان نے آگرہ سے اور پرویز مشرف کے خاندان نے نئی دہلی سے ہجرت کی تھی۔

عارف علوی کے والد ڈاکٹر حبیب الرحمان الٰہی علوی تقسیم ہند سے قبل نہرو کے دانتوں کا علاج کیا کرتے تھے اور ان کے خاندان کے پاس آج بھی بطور وزیر اعظم نہرو کے ان کے والد کو لکھے گئے خطوط آج بھی موجود ہیں۔

ان کے والد پاکستان کے قیام کے بعد کراچی ہجرت کر کے آ ئے تھےجہاں صدر کے علاقے میں انہوں نے اپنا ڈینٹلکلینک کھولا تھا۔انہیں اپنے والد سے ہی دانتوں کے علاج کا ہنر وراثت میں ملا ہے۔

علاوہ ازیں ان کے والد کا تعلق جناح خاندان سے بھی تھا ،فاطمہ جناح نے انہیںمہٹاپیلس کا ٹرسٹی مقرر کیا تھا۔


مکمل خبر پڑھیں