بابری مسجد خود ہی منہدم ہوگئی تھی، سورا بھاسکر کا ملزمان کی بریت پر ردعمل

October 01, 2020

ممبئی(مانیٹرنگ ڈیسک) سی بی آئی کی خصوصی عدالت نے 6 دسمبر 1992 کو ایودھیا میں بابری مسجد منہدم کئے جانے کے معاملے میں گزشتہ روز بہت انتظار کے بعد فیصلہ سناتے ہوئے سبھی ملزمان کو بری کردیا۔ خصوصی عدالت کے جج ایس کے یادو نے اپنے فیصلے میں کہا کہ بابری مسجد منہدم کئے جانے کا سانحہ منصوبہ بند نہیں تھا، یہ ایک اتفاقی سانحہ تھا۔ فیصلہ آنے کے بعد بولی وڈ اداکارہ سوارا بھاسکر ، ریچا چڈھا ، انوبھو سنہا سمیت بولی وڈ کے کئی ستاروں نے اپنا رد عمل ظاہر کیا ہے۔اداکارہ سورا بھاسکر نے اپنے ٹوئٹ میں لکھا کہ’بابری مسجد خود ہی منہدم ہوگئی تھی۔اداکارہ ریچا چڈھا نے ٹوئٹ کرکے کہا کہ ’اس جگہ سے اوپر بھی ایک عدالت ہے، یہاں دیر ہے اندھیر نہیں’۔فلم ڈائریکٹر انوبھو سنہا نے ٹوئٹ کرکے لال کرشن ایڈوانی کو مبارکباد پیش کی۔ انوبھو سنہا نے ٹوئٹ کیا ’لال کرشن ایڈوانی کو مبارکباد۔ اب آپ اس ملک کی روح پر اکیلے ایک لمبی خونی لکیرکھینچنے کے الزامات سے بری ہوگئے ہیں۔ بھگوان آپ کو بہت لمبی عمر دے’۔واضح رہے کہ اس معاملے میں لال کرشن ایڈوانی، مرلی منوہرجوشی، کلیان سنگھ، اوما بھارتی، ونے کٹیار، سادھوی رتنبھرا، مہنگ نرتیہ گوپال داس، ڈاکٹر رام ولاس ویدانتی، چنپت رائے، مہنت دھرم داس، ستیش پردھان، پون کمار پانڈے، للو سنگھ، پرکاش شرما، وجے بہادر سنگھ، سنتوش دوبے، گاندھی یادو، رام جی گپتا، برج بھوشن شرن سنگھ، کملیش ترپاٹھی، رام چندر کھتری، جے بھگوان گوئل، اوم پرکاش پانڈے، امرناتھ گوئل، جے بھگوان سنگھ پویا، ساکشی مہاراج، ونے کمار رائے، نوین بھائی شکلا، آر این شریواستو، آچاریہ دھرمیندر دیو، سدھیر کمار ککڑ اور دھرمیندر سنگھ گرجر ملزم تھے۔