• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

سپاہی توحید نے ارسلان کا قتل پیچھا کرکے کیا، مقدمہ درج


کراچی میں سادہ لباس اہلکار نے بورڈ آفس کے قریب ٹیوشن پڑھ کر گھر جانے والے ارسلان محسود کو پیچھا کرنے کے بعد فائرنگ کرکے قتل کیا تھا۔

اورنگی ٹاؤن تھانے کے سادہ لباس اہلکار نے 16 سالہ لڑکے کو اس وقت قتل کیا جب وہ ٹیوشن پڑھ کر گھر واپس جارہا تھا۔

سپاہی توحید نے اپنے سویلین ساتھی عمیر کے ساتھ مل کر پیچھا کرکے گولی ماری، جس سے ارسلان جان کی بازی ہار گیا جبکہ اُس کا دوست یاسر زخمی ہوگیا۔

اورنگی ٹاؤن تھانے کے سپاہی توحید نے قتل کرکے جھوٹی اطلاع دی کہ مقابلے میں مسلح شخص مارا گیا ہے اور دعویٰ کیا کہ ملزمان کے قبضے سے پستول اور گولیاں ملی ہیں۔

جھوٹ کا پول کھلنے پر سپاہی توحید کے خلاف قتل اور انسدد دہشت گردی ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کرلیا گیا۔

قومی خبریں سے مزید